میرا نام زینب ہے اور مجھے آم بہت پسند ہیں: معصوم بچی کا آخری ہوم ورک


قصور میں زیادتی کے بعد بہیمانہ انداز میں قتل ہونے والی 7 سالہ زینب کی اسکول کی کاپی پر لکھی تحریروں نے پڑھنے والی ہر آنکھ کو اشک بار کردیا۔

ننھی زینب کی کتابیں اور کاپیاں اسی طرح اس کے بیگ میں موجود ہیں، جن پر 4 جنوری تک کا ہوم ورک موجود ہے، یہ وہی روز ہے جب زینب اغوا ہوئی اور پھر کبھی لوٹ کر گھر واپس نہ آئی جب کہ زینب کی اسکول کی کاپیوں پر لکھی تحریروں نے پڑھنے والی ہر آنکھ کو اشک بار کر دیا۔

اردو کے ہوم ورک میں زینب نے ’’ میری ذات ‘‘ پر ایک مضمون میں اپنا تعارف کراتے ہوئے لکھا کہ ’’میں ایک لڑکی ہوں، میرا نام زینب ہے، میرے والد کا نام امین ہے، میری عمر سات سال ہے، میں قصور میں رہتی ہوں، میں اول جماعت میں پڑھتی ہوں اور مجھے آم بہت پسند ہیں‘‘۔

image_pdfimage_print
Comments - User is solely responsible for his/her words


اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں