میر پور ماتھیلو میں ہندو لڑکی اغوا ہوئے 15 روز گزر گئے: پولیس کا کارروائی سے گریز


سندھ اسمبلی میں جمعہ کو میرپور ماتھیلو سے اغواء ہونے والی 16 سالہ ہندو لڑکی پوجا بائی کا معاملہ اٹھایا گیا ۔ حکومت کی طرف سے یہ یقین دہانی کرائی گئی کہ اس لڑکی کی بازیابی کے لیے ہرممکن اقدا ما ت کیے جائیں گے ۔ ایم کیو ایم کے اقلیتی رکن دیوان چند چاولہ نے نقطہ اعتراض پر ایوان کو بتایا کہ پوجا بائی کے اغواء کو 15 دن ہو گئے ہیں ۔ پولیس اس کی بازیابی کے لیے کچھ نہیں کر رہی ہے ۔ مجھے ڈر ہے کہ اس لڑکی کا مذہب تبدیل کراکے اسے پیش کیا جائے گا ۔ اس طرح کے وا قعا ت سندھ میں ہو رہے ہیں ۔ کہیں اقلیتوں کے ساتھ ایک اور سانحہ رونما نہ ہو جائے ۔ حکومت فوری طور پر لڑکی کو بازیاب کراکے ورثاء کے حوالے کرے ۔ سینئر وزیر نثار احمد کھوڑو نے ایوان کو یقین دہانی کرائی کہ حکومت پوجا بائی کی بازیابی کے لیے ہر اقدامات کرے گی ۔

image_pdfimage_print
Comments - User is solely responsible for his/her words


اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں