لاہور کے ساتھ کھڑے رہو


muhammad ayubکھلوتے رہوو
ہمت کرو، کھلوتے رہوو
آج دا دیہاڑا مڑ کے آسی نہ آسی
کس آں پتا
ساڈی ایہ تاب اے اسیں کھلو سکنیاں
کسے دا ہتھ نپ کے کائی کدھ نپ کے یاں اپنے سہارے تے
چپ کر کے ہنجوں نال یاں کائی ورد پڑھدیاں
ساڈا جگر پراناں شاہر لہور کھلوتا
جیویں کوئی زخمی مورچے اُتے
اسیں کھلوویے جیویں یار کھلوندن

اردو ترجمہ

(کھڑے رہو

ہمت کرو، کھڑے رہو
آج کا دن، کسے خبر، پھر آئے نہ آئے
کس کو خبر ہے
ہم میں اتنی ہمت ہے کہ کھڑے ہو سکیں
کسی کا ہاتھ پکڑ کے، کسی دیوار کا سہارا لے کر، یا اپنے پیروں پر
خاموشی سے آنسو بہاتے ہوئے یا زیر لب مقدس کلمات پڑھتے ہوئے
ہمارا جگری دوست شہر لاہور کھڑا ہے

جیسے کوئی زخمی مورچے پر کھڑا ہوتا ہے
ہمیں بھی کھڑا ہونا چاہیے

جیسے دوست کھڑے ہوتے ہیں)


Comments

FB Login Required - comments

One thought on “لاہور کے ساتھ کھڑے رہو

  • 28-03-2016 at 10:43 am
    Permalink

    Dr Ayub, Zindabad

Comments are closed.