سنگت پوہ زانت

اچھے لوگوں کی یادگیری بھی کیسی اچھی ہوتی ہے اور مایوس و پژمردہ انسانوں کو بھی کیسے تازہ دم کر دیتی ہے، اس کا مظاہرہ ہم نے کل کے سنگت پوہ و زانت میں دیکھا۔ جہاں ایک "مرحوم" کا تذکرہ زندہ انسانوں کی محفل کو زعفرانِ زار بناتا رہا۔ 2003 کے بعد سنگت میں آنے…

Read more

حال حوال کی بندش: ’مت قتل کرو آوازوں کو!‘

 یہ 2009 کی بات ہے۔ میں کوئٹہ سے شائع ہونے والے قوم پرست رجحان کے حامل روزنامہ’ آساپ‘ کا ایڈیٹوریل انچارج تھا۔ یہ بلوچستان میں مزاحمتی تحریک کے ابھار اور اس کے خلاف کارروائیوں کے عروج کا زمانہ تھا۔ اسی برس فروری میں ہمارے ایڈیٹر ان چیف پر جان لیوا حملہ ہوا۔ خوش قسمتی سے…

Read more