ڈپلومیٹک انکلیو میں پولیس سے غنڈہ گردی کرنے والی خاتون 14دن جیل میں

اسلام آباد: ڈیوٹی جج نے بغیر نمبر پلیٹ والی گاڑی میں ڈپلومیٹک انکلیو میں داخل ہونے کی کوشش سے روکنے پر سیکیورٹی اہلکاروں کو دھمکیاں دینے والی خاتون کو 14 روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیجنےکا حکم دے دیا۔ ڈاکٹر شہلا شکیل سیٹھی کو آج صبح پولیس نے اسلام آباد کی سرکاری ہاؤسنگ سوسائٹی سے…

Read more

سعودی معصوم ہیں، خاشقجی اپنی موت کا خود ذمہ دار ہے

دنیا بھر میں ہنگامہ مچا ہوا ہے کہ سعودی صحافی جمال خاشقجی کو سعودی حکومت نے مروا دیا ہے۔ طرح طرح کے الزامات لگ رہے تھے لیکن آج سعودی حکومت نے اصل بات بتا دی ہے جس پر صدر ٹرمپ کے علاوہ سعودی عرب کے دیگر تمام دوستوں کو بھی یقین آ رہا ہے۔

یہ معاملہ دو اکتوبر کو شروع ہوا تھا جب خاشقجی طلاق کے کاغذات لینے استنبول میں سعودی قونصل خانے میں گئے تھے۔ باہر اپنی منگیتر کو کھڑا کر گئے کہ تم میرا فون سنبھالو میں بس گیا اور آیا۔ ہاں اگر کوئی دیر سویر ہو گئی تو پولیس کو بلا لینا۔ دیر سویر ہو گئی اور پولیس آ گئی۔ قونصل خانے والوں سے پوچھا گیا کہ یور ایکسیلینسی، خاشقجی کہاں ہے؟ قونصل خانے والوں نے بتا دیا کہ وہ منگیتر باہر کھڑی دیکھ کر پچھلے دروازے سے چلے گئے تھے، ہمارے پاس کوئی ویڈیو تو نہیں ہیں لیکن ہم معزز لوگ ہیں، ہمارے الفاظ پر یقین کر لو۔ یاد رہے کہ سعودیوں نے ہرگز بھی یہ نہیں کہا تھا کہ خاشقجی اپنے پیروں پر چل کر پچھلے دروازے سے گیا ہے یا کسی ڈبے میں بند ہو کر اس لیے ان پر غلط بیانی کا الزام نہیں لگایا جا سکتا ہے۔

Read more

مخالف اپنے پاؤں پر کلہاڑی مار رہا ہو تو اسے ڈسٹرب مت کریں

انتخابات کی گہما گہمی میں سننے میں آیا تھا کہ آصف زرداری حکومت بنانے میں زیادہ دلچسپی نہیں رکھتے اور انہوں نے نواز شریف کو بھی قائل کرنے کی کوشش کی تھی کہ وہ عمران خان کو حکومت میں آنے دیں۔ آصف زرداری کو صرف سندھ میں حکومت چاہیے تھی۔ وجہ یہ بتاتے تھے کہ ایک مرتبہ قوم کا شوق پورا ہونے دیں۔ ویسے تو سال دو سال کی بات ہے مگر پانچ پورے ہو جائیں تو پھر بھی خیر ہے۔ کام پکا ہو جائے گا۔

اب سننے میں آ رہا ہے کہ نواز شریف کو یہ بات سمجھ آ گئی ہے اور ان کی خاموشی کی وجہ یہ فلسفہ بیان کی جا رہی ہے کہ جب کوئی مخالف اپنے پاؤں پر کلہاڑی مار رہا ہو تو اسے ڈسٹرب کر کے اس کی توجہ کو بھٹکانا نہیں چاہیے۔ اسے پوری یکسوئی سے اپنا کام بہترین طریقے سے کرنے کا موقعہ دینا چاہیے۔

Read more

جمال خشوگی کا مبینہ قتل، سعودی عرب کی مشکل اور ترکی کا مفاد

دو اکتوبر کے دن سعودی صحافی جمال خشوگی استنبول میں سعودی عرب کے قونصل خانے میں اپنی طلاق کے کاغذات حاصل کرنے گیا اور واپس نہیں آیا۔ باہر اس کی منگیتر باہر کھڑی انتظار کرتی رہی اور کئی گھنٹے بعد اس نے ترک حکام کو مطلع کیا۔ سعودی کہتے ہیں کہ خشوگی قونصل خانے سے چلا گیا تھا لیکن اس کے اندر جانے کی ویڈیو تو ہے، باہر آنے کی نہیں۔

ترک حکام مختلف خبر رساں اداروں کو بتا رہے ہیں کہ خشوگی کو قتل کر کے اس کی لاش کو ٹکڑے ٹکڑے کر دیا گیا ہے اور ان کے پاس خشوگی پر تشدد اور قتل کی گیارہ منٹ کی ریکارڈنگ موجود ہے۔ وہ یہ ریکارڈنگ کئی ممالک بشمول سعودی عرب اور امریکہ کے ساتھ شیئر کر رہے ہیں۔ ترک حکام کے مطابق اس دن قونصل خانے کے سٹاف کو صبح ساڑھے گیارہ بجے ہی چھٹی پر بھیج دیا گیا تھا اور انہیں کہا گیا تھا کہ اس دن قونصل خانے پر ایک میٹنگ ہونی ہے۔ اس ریکارڈنگ کے بارے میں وہ بتا رہے ہیں کہ اس کا جمال خشوگی کی ایپل واچ سے کوئی تعلق نہیں ہے، یعنی ترک انٹیلی جنس کامیابی سے سفارت خانے کو بگ کیے بیٹھی ہے۔

Read more

لاہور میں اخلاقی فتح سے اخلاقی شکست تک

سنہ 2013 میں الیکشن ہوا تھا تو تحریک انصاف نے الیکشن میں شکست کی وجہ 35 پنکچر قرار دیتے ہوئے دھاندلی کا الزام لگایا تھا اور خواجہ سعد رفیق کے حلقے میں اپنی اخلاقی فتح کا اعلان کیا تھا۔ اس اخلاقی فتح کے بعد 2018 کے الیکشن میں عمران خان نے سعد رفیق کے حلقے…

Read more

دہشت گرد اساتذہ سے نیب کو ڈر لگتا ہے

کل نیب عدالت میں اساتذہ کو ہتھکڑی لگانے پر آپ نہایت ہی عزت مآب چیف جسٹس آف پاکستان جناب ثاقب نثار نے ڈی جی نیب سلیم شہزاد سے پوچھا کہ ”آپ نے کس قانون کے تحت اساتذہ کی تضحیک کی؟ “ ڈی جی نیب نے آبدیدہ ہو کر کہا کہ مجاہد کامران کوسکیورٹی خدشات کے پیش نظر ہتھکڑیاں لگائیں۔ ڈاکٹر مجاہد کامران کی عمر تقریباً 67 برس ہے۔ آپ حیران ہوں گے کہ سیکیورٹی کے کن خدشات کی وجہ سے انہیں اور دیگر اساتذہ کو ہتھکڑی لگائی گئی ہے۔ اس واقعے کی ویڈیو سے دیکھا جا سکتا ہے کہ یہ بابے تو خود سے چل پھر بھی نہیں سکتے۔ ان کو لاٹھی بھی چاہیے اور دائیں بائیں دو جوانوں کا سہارا بھی۔ پھر نیب کو سیکیورٹی کے کیا خدشات تھے؟

کیا نیب کو یہ ڈر تھا کہ وہ ضعیف بابے درجنوں پولیس والوں کو جیکی چن سٹائل میں مار پیٹ کر دو چھلانگیں لگائیں گے اور کچہری کی دیوار پھاند جائیں گے؟ یا پھر نیب کو یہ اندیشہ تھا کہ یہ اساتذہ جیب سے قلم نکالیں گے اور سب افسران کو کاٹ ڈالیں گے؟ نیب والوں کو قلم کے تلوار سے زیادہ طاقتور ہونے والا مقولہ ڈرا رہا ہو گا۔ یا پھر یہ خوف ستا رہا تھا کہ کہیں جمعیت والے ان بابوں پر حملہ آور ہو کر ان کے ہاتھوں پٹ نہ جائیں؟ جمعیت والے اپنے آفیشل ٹویٹر ہینڈل پر ان اساتذہ کے ہاتھوں میں ہتھکڑیاں پڑنے پر خوشیاں منائے دیکھے جا سکتے ہیں۔

Read more

ڈالر کو چڑھانا حکومت کا ایک سوچا سمجھا منصوبہ ہے

بعض لوگ یہ تاثر دے رہے ہیں کہ روپے کی قیمت میں یکلخت اتنی زیادہ کمی اس وجہ سے ہوئی ہے کہ تحریک انصاف کی حکومت معاشی فرنٹ پر فیل ہو گئی ہے۔ ایسا ہرگز نہیں ہے۔ یہ ایک سوچا سمجھا منصوبہ ہے جس کے ذریعے پاکستان محض تین برس میں اپنے 90 ارب ڈالر…

Read more

حکومت کا نظام سقہ معاشی ماڈل

اوورسیز پاکستانیوں نے نئے پاکستان کے نہایت ہی صادق اور امین وزیراعظم کی اپیل کے باوجود ہزار ہزار ڈالر نہیں بھیجے۔ انہوں نے ووٹ بھی نہیں بنوائے جس کی وجہ سے اگلے انتخابات میں مزید نیا پاکستان بنانے میں پریشانی ہو سکتی ہے۔ بہرحال پریشانی کی کوئی بات نہیں ہے۔ ہمارے ذہن میں ایک بہترین منصوبہ ہے جس کے ذریعے ان سے نئے پاکستان کی خاطر معقول رقم نکلوا سکتے ہیں۔ بلکہ ہزار ڈالر کی جگہ ان سے ملین ڈالر چندہ لے لیں گے۔

ہمیں اعلی حضرت خلد آشیانی شہنشاہ نصیر الدین ہمایوں کی زندگی سے سبق لینا چاہیے۔ جب شہنشاہ ہمایوں کی سلطنت ان کے گھوڑے سمیت ڈوب رہی تھی تو انہیں ایک شخص نظام سقہ نامی نے اس مشکل سے باہر نکالا۔ شہنشاہ ہمایوں نے اس سے سروس فیس پوچھی تو اس نے ڈھائی دن کی بادشاہت مانگ لی۔

شہنشاہ نے یہ سوچ کر نظام سقے کو حکومت سونپ دی کہ وہ نہ صرف یہ کہ نہایت غریب ہے اور غریبوں کے مسائل سمجھتا ہے بلکہ اس کے گھر میں روشنی کا انتظام بھی نہیں ہے۔ شام سے ہی اس کا چراغ بجھا بجھا سا رہتا ہے۔

Read more

سیاسی عدم استحکام سے سرمایہ اڑنچھو ہوتا ہے

آج صبح انٹر بینک مارکیٹ میں ڈالر یکلخت 11 روپے 70 پیسے کے قریب چڑھ گیا۔ دن کے اختتام پر انٹر بینک مارکیٹ میں ڈالر 9 روپے 39 پیسے کے اضافے کے ساتھ 133 روپے 64 پیسے کی ریکارڈ سطح پر بند ہوا۔ اوپن مارکیٹ کا ریٹ انٹر بینک سے چار پانچ روپے زیادہ ہوتا…

Read more

شہباز شریف نیلسن منڈیلا کیسے بنے؟

شہباز شریف اندر ہو گئے۔ اندر ہونے سے پہلے انہوں نے ایسی کارکردگی دکھائی کہ وزیراعظم عمران خان بھی متاثر ہو گئے اور لاہور آ کر ایک اہم پریس کانفرنس کر ڈالی جس میں انہوں نے وضاحت بھی کر دی کہ وہ اس لیے پریس کانفرنس کررہے ہیں کیوں کہ انہوں نے گزشتہ روز شہباز…

Read more