اپنی مرحومہ ماں کے نام، اِک بیٹی کا پیغام

پیاری ماں، ہاں اچھی ماں ٹھنڈی، میٹھی، گھنیری چھاں لوٹ بھی آ کہ بیٹھی ہوں میں آج بھی رستہ تکتی ہوں یہ بھلا کیا بات ہوئی تو دور گُلوں میں بیٹھی ہے اور ہم دنیا میں تنہا ظالم زمانوں سے لڑتی ہیں اور پھر دنیا والےکہاں کے اچھے لڑتے لڑتے تھکتی ہوں میں آج بھی…

Read more