آزادی کی تاریک سرنگ

اس ملک کا پرانا نام اسمارا تھالیکن انسویں صدی میں جب اٹلی نے اس پر قبضہ کیا تو اس کا نام بھی تبدیل ہو گیا اور وہ اسمارا سے اریٹیریا بن گیا۔ دوسری جنگ عظیم کے بعد اٹلی اپنے مسائل سے دوچار ہوا تو اریٹیریا ہمسایہ ملک ایتھوپیا کو سونپ کر چلتا بنا، ایتھوپیا نے…

Read more

پرنٹ میڈیا۔ تاریخ اور مستقبل

1609ء میں جرمنی سے پہلا مطبوعہ خبرنامہ (اخبار ) اویساریشن آرڈرزیٹنگ ( Avisa Relation order zeitung) شائع ہوا جبکہ انگریزی صحافت کی ابتدا 13 سال بعد ہوئی جب 1622ء میں لندن سے ویکلی نیوز کا اجراء ہوا۔ لیکن اردو صحافت کو پہلا قدم اٹھانے کے لئے ابھی دو سو سال کا انتظار کرنا ہی تھا۔…

Read more

ٹموتھی ڈکسٹر نے دولت کیسے کمائی؟

اگر بنجمن فرینکلن (سابق امریکی صدر ) سے بل گیٹس اور لیڈی ڈیانا سے کرنل سنیڈرز (کے ایف سی کا مالک ) تک عالمی شہرت حاصل کرنے والے اپنے چمکتے ہوئے تارے اور دمکتی ہوئی قسمت لیکر نہ آتے تو آج وہ بھی کسی مائیکل اور کسی میری کی طرح گمنام زندگی گزارتے اورگمنام موت…

Read more

یہ انسان تھے یا فرشتے؟

ایرینا سینڈلر کا تعلق (وارسا) پولینڈ سے تھا ۔دوسری جنگِ عظیم کے دوران اسے اس کیمپ میں پلمبر کا کام مل گیا ،جہاں نازی فوج نے کئی ہزار یہودی خاندانوں کو محصور کر رکھا تھا ۔ ایک خوفناک موت ان یہودی خاندانوں کے آس پاس منڈلا رہی تھی ۔ایرینا سینڈلر روز اس کیمپ میں محصور…

Read more

کلثوم نواز: مر کے بھی چین نہ پایا تو کدھر جائیں گے

لیکن ان لوگوں کو کیا کہ وہ ایک پڑھی لکھی نمود و نمائش اور تکبر سے بہت دور ایک پڑھی لکھی ( حتٰی کہ صاحب کتاب ) خاتون تھیں ان لوگوں نے تو وہی کہنا تھا جو انھیں سمجھایا گیا تھا یا جس طرح ان کی تربیت کی گئی ہے۔ لیکن ٹھہریے پہلے ہمیں یہ…

Read more

جنریشن ایکس اور ڈیجیٹل جنریشن کی مشکل

عمرانیات کے ماہرین کا خیال ہے کہ ہماری نسل کے افراد جن کی عمریں پینتالیس سال سے ذائد ہے انہوں نے انسانی تاریخ میں دنیا کو سب سے ذیادہ بدلتے ہوئے دیکھا، یہی ماہرین 1961ء سے 1981ء کے درمیان پیدا ہونیوالی نسل کو جنریشن ایکس کہتے ہیں۔ اس جنریشن نے بارشوں کے موسم میں ٹپکتے…

Read more

ریاستِ مدینہ کے طور طریقے اور عمران خان

چلیں ہم ریاستِ مدینہ کا ذکر صرف حضرت عمرؓ کے دورِ خلافت تک محدود کرتے ہیں جو انسانی تاریخ کی بہترین انتظامی سیاسی اور فوجی اصلاحات کا ایک زریّں دور ہے، لیکن سب سے پہلے ہمیں سمجھنا ہوگا کہ یہ مثالی ریاست تب وجود میں آئی جب ریاست کے سربراہ نے اپنے آپ کو وی…

Read more

سلیم صافی: مجرم یا صحافی

پرانی بات ہے، میں ایک قومی روزنامے سے بحیثیت کالم نگار وابستہ تھا۔ پشاور صدر کے جس بلڈنگ میں مذکورہ روزنامے کا دفتر تھا، وہاں ایک کمرے میں ایک نیوز ایجنسی کا دفتر بھی تھا، ایک دبلا پتلا دیہاتی ٹائپ کا ایک نوجوان اسی نیوز ایجنسی میں کام کرتا تھا سو اس بلڈنگ کے علاوہ…

Read more

اپوزیشن عمران کے معاملے میں غصے نہیں تدّبر سے کام لے

یہ تحریریں پڑھنے والوں کو بخوبی علم ہے کہ میں کبھی عمران خان کا مداح نہیں رہا یا با الفاظ دیگر اپنی حقیقت پسندی کو کسی بے بنیاد خوش فہمی کی نذر نہیں ہونے دیا کیونکہ صبح و شام اس کے یو ٹرنز بھی دیکھے اور پی ٹی آئی حکومت کو بھی کے پی کے…

Read more

امریکی صحافی کا گونزو جرنلزم

ہنٹر ایس تھامسن کی صحافتی تحریروں کو پورے امریکہ میں بہت شہرت ملی کیونکہ اس نے خطرناک سچ پر بھی سوالات اُٹھانے شروع کر دیے تھے۔ ہنٹر کے اس سٹائل کو گونزو جرنلزم کہا جاتا ہے۔ اس طرح کی جرنلزم میں لکھاری اپنی رائے کو طنز مبالغہ اور غیر یقینی خیالات کے لبادے میں لپیٹ…

Read more