سانحہ ساہیوال کی ویڈیوز فیک ہیں: صوبائی وزیر پنجاب محمود الرشید کا دعویٰ

جی این این کی اینکر عائشہ بخش نے جب پنجاب حکومت کے سینئیر وزیر میاں محمود الرشید سے گفتگو کرتے ہوئے سانحہ ساہیوال کی ویڈیوز کا ذکر کیا تو میاں محمود الرشید نے ان ویڈیوز کو فیک قرار دے دیا۔

عائشہ بخش نے کہا ”دوسری بات یہ ہے کہ گاڑی جس جگہ کھڑی ہے بچے نکالنے کے بعد پولیس اس گاڑی پر سٹریٹ فائر کر رہی ہے ان بچوں کو سائیڈ پر کرنے کے بعد۔ حکومت کا اس پر کوئی کمنٹ نہیں آیا۔ یہ بڑی صاف اور واضح ویڈیوز ہیں۔ جو بتا رہی ہیں کہ گاڑی میں زخمی ہیں یا لوگ کس حالت میں ہیں لیکن پھر بھِی بچے نکال کر سٹریٹ فائرنگ ان پر کی گئی ہے۔“

Read more

”اندھے انتقام کی آخری ہچکی“: مریم نواز شریف کی ٹویٹس

مریم نواز شریف نے نواز شریف کو سزا ہونے کے بعد یکے بعد دیگر کئی ٹویٹس کی ہیں۔ انہوں نے کہا ہے:

ایک ہی شخص کو چوتھی بار سزا۔
اندھے انتقام کی آخری ہچکی
مگر فتح نواز شریف کی۔ اللّہ کا شکر،
ڈھائی سال کے طویل انتقام نما احتساب کے بعد، تین نسلیں کھنگالنے کے بعد، ایک پائی کی کرپشن نہ کِک بیک نہ کمشن۔ نا سرکاری خزانے میں رتی بھر خیانت۔

Read more

بہت ہو چکی نفرتیں – پٹاری کا سانحہ پشاور پر یادگاری نغمہ

پاکستان کے ممتاز میوزک سٹریمنگ ادارے پٹاری نے سانحہ آرمی پبلک سکول، پشاور پر ایک یادگاری نغمہ ریلیز کیا ہے۔ یہ گیت نفرتوں کا مقابلہ کرنے کے لئے محبت کا پیغام دیتا ہے۔ یہ گیت علی آفتاب سعید کی کمپوزیشن اور آواز میں ہے، شاعر مختار جاوید ہیں اور سعد سلطان نے اسے پروڈیوس کیا ہے۔

Read more

مدینے کی ریاست کا تصور پیش کرنے والے کے ہم غلام ہیں: مولانا طارق جمیل

مولانا طارق جمیل صاحب نے عمران خان کی بھرپور حمایت کا اعلان کرتے ہوئے پاکستان کے بیس کروڑ عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ عمران خان کی پوری پوری مدد کریں۔ ان کی تقریر کا متن درج ذیل ہے۔

Read more

تحریک لبیک کے خلاف کریک ڈاؤن کے بعد اس سے لاتعلقی کے اعلانات

تحریک لبیک پاکستان کے خلاف حکومتی کریک ڈاؤن کے بعد مختف افراد کی طرف سے اس سے اعلان لاتعلقی کیا جانے لگا ہے۔ ایک طرح تحریک لبیک یا رسول اللہ کے سربراہ ڈاکٹر اشرف آصف جلالی نے تحریک لبیک پاکستان اور علامہ خادم حسین رضوی کے ساتھ اظہار لاتعلقی کر دیا اور کہا کہ تحریک لبیک پاکستان کی ہڑتال اور جلاؤ گھیراؤ سے تحریک لبیک یا رسول اللہ اور تحریک لبیک اسلام کا کوئی تعلق نہیں ہے۔

دوسری طرف شیخوپورہ کے دو بھائیوں کا اخبار میں شائع ہونے والا اعلان بھی دلچسپی کا باعث بنا ہوا ہے۔

Read more

لیڈی ریڈنگ ہسپتال، ایک تجربہ ایک مشاہدہ!

سرکاری ہسپتالوں سے متعلق یہ تاثر پختہ ہوچکا ہے کہ یہاں کوتاہی کے سوا کچھ نہیں ہوتا۔ ڈاکٹروں سے متعلق یہ گمان طے ہوچکا ہے کہ یہ کچھ کرتے ہیں توبس غفلت ہی کرتے ہیں۔ سرکاری اور نجی ہسپتالوں کا تقابل کرتے ہوئے ہم ایک بات بھول جاتے ہیں۔ نجی ہسپتال کے پاس وسائل کتنے ہی زیادہ ہوں، وہاں ایمرجنسی میں ڈیڑھ سو سے دو سو مریض دیکھے جاتے ہیں۔ سرکاری ہسپتال کے پاس وسائل کتنے ہی محدود کیوں نہ ہوں، وہاں کی ایمرجنسی تین ہزار سے چار ہزار مریضوں کو ہنسی خوشی نمٹاتی ہے۔

تمام بڑے شہروں میں موجود سرکاری ہسپتال شہر بھر کی ضرورتیں پوری کرتے ہیں۔ شاید لیڈی ریڈنگ ہی ایسا ہسپتال ہے جو صوبے بھر کا بوجھ بسروچشم اٹھارہا ہے۔ صوبے بھر کا ہی کیا، ایمرجنسی مینیجررفیع اللہ خان مروت تو کہتے ہیں کہ سرحد کے اس پار پکتیکا اور جلال آباد تک سے مریض آتے ہیں۔ وجہ پوچھنے پر بتاتے ہیں ”اس کی چار وجوہات ہیں۔ پہلی وجہ علاج کا معیار ہے۔ دوسری وجہ تمام سہولیات کی فیس محض انیس روپے ہونا ہے۔ تیسری وجہ ہسپتال سے متعلق صوبے بھر میں قائم برسہا برس سے چلا آنے والا مثبت تاثر ہے۔ چوتھی وجہ اس ہسپتال سے قائم لوگوں کی تاریخی انسیت ہے“۔

Read more

چیف جسٹس نے ڈیم فنڈ میں عطیہ دینے والے کے دماغی معائنے کا حکم دے دیا

روزنامہ ڈان میں شائع ہونے والی خبر کے مطابق چیف جسٹس آف پاکستان جناب ثاقب نثار نے اتوار کو ایک ایسے شخص کے دماغی معائنے کا حکم دے دیا ہے جس نے ڈیم فنڈ کو بھاری عطیہ دیا تھا۔ شیخ شاہد نے چند روز قبل اپنی تقریباً آٹھ کروڑ مالیت کی جائیداد سپریم کورٹ آف…

Read more

فسادیوں کو رہا کرنے کا حکم، ریاست لہولہان، پولیس دل چھوڑ بیٹھی

شیخوپورہ سے ایس  ایچ او خرم ذاکر ڈوگر نے کل 6 نومبر کی کچھ ٹویٹس میں بتایا ہے کہ آج اعلی حکام سے احکامات وصول ہوئے ہیں کہ تحریک لبیک کے تمام کارکنان کو فوراً رہا کر دیا گیا جائے، بشمول ان کے جو فسادات میں ملوث تھے۔ اس لیے ان کو رہا کر دیا ہے اور ان سے درخواست کی ہے کہ وہ سڑکیں بلاک کرنے یا ملک میں فساد مچانے سے احتراز کریں۔ امید ہے کہ وہ ملکی قانون کی پابندی کریں گے۔

لیکن سب سے اچھی چیز یہ ہے کہ حمزہ، جس نے موٹروے پر تباہی پھیلائی تھی، ابھی بھی پولیس کی حراست میں ہے۔
ککھ نئیں ہونا ایتھے جنی مرضی تبدیلی سرکار آ جاوے (یہاں کچھ نہیں ہونا جتنی مرضی تبدیلی سرکار آ جائے)۔

Read more