سوشل میڈیا اظہار ذات ہے۔اپنے ہیرو خود بنیں

فیس بک نے میری بہترین خوبیوں کو اجاگر کیا ہے اور بری باتوں کو دبا دیا ہے۔یقینا میں کسی بے نام شخص کی طرح منظر سے غائب نہیں ہونا چاہتا۔میں چاہتا ہوں کہ میری سوچ سائبر ذرات کی صورت اس ورچوئل دنیا میں رہے۔ میں 35۔7بلین لوگوں میں سے نہیں ہونا چاہتا۔میں ایک بے نام…

Read more

احترام یا منافقت

عمران خان کے ننگے پاوں مدینہ میں جہاز سے اترے پہ آپ کی منصفانہ رائے کیا ہے ؟ کیا یہ احترام کا تقاضا ہے یا پھر ایک نئے ٹرینڈ کی بنیاد رکھی گئی ہے؟ میں نے سنا ہے کہ خلیفہ عمر فاروق رض مدینہ میں ہمیشہ ننگے پاوں گھومتے تھے۔ یہ مدینہ منورہ سے عقیدت…

Read more

بادشاہ سلامت ہمارے پاس الفاظ ہی تو ہیں انہیں زنجیرمت پہنائیے

سنسر شپ اور طاقت کے زور پہ اظہار رائے کو دبانا ہمیشہ ناکام کیوں رہتا ہے؟ جب سچ کو دبایا جائے اور خاموش رہنے کا مطالبہ کیا جائے تو خاموشی در حقیقت جھوٹ ہوتی ہے۔اس لیے ہمیں کہنے دیجیے ہمارے الفاظ ہمارے جذبات کا اظہار ہیں سوچ اور اظہار رائے پر لگائی گئی پابندی تاریخ…

Read more

مسلمانوں کو کھوئی ہوئی عظمت کی بحالی کے لیے کیا کرنا چاہیے

سائنس اسلام کے دورِ عروج میں پھیلی پھولی کیونکہ اسلام میں عقلیت پسندی کی ایک مضبوط روایت تھی جسے مسلمان مفکرین متعزلہ کے نام سے جانتے ہیں۔ یہ روایت انسان کے آزادانہ فکری چناؤ کو مانتی ہے جو کہ تقدیر اور یہ کہ ہر بات پہلے سے لکھی جا چکی ہے کی روایت کے سخت…

Read more

تاریخ کے دسترخوان پہ ہماری حرام خوری

جون ایلیا نے کہا تھا ہم تاریخ کے دستر خوان پہ ہزاروں سالوں سے حرام خوری کر رہے ہیں۔ یہ بات سچ ہے اور سچ کڑوا ہوتا ہے۔ مولانا آزاد کہتے ہیں کہ مسلمانوں نےبرصغیر پہ ایک ہزار سال بادشاہت قائم نہیں کی تھی بلکہ وہ خدا بن بیٹھے تھے۔ کوئی جمہوریت تھی نہ ہی…

Read more

پشتون قوم کو موجودہ دور میں اپنی بقا کے لیے کیا کرنا چاہیے؟

آج کا دور ذہانت کا اور ورچوئل کنٹیوٹی کا دور ہے۔ اس دور میں اپنی بات پہنچانے کے لیے ذہانت اور علم درکار ہے۔ جو اہمیت دلیل اور عقلی توجہہ کو حاصل ہے وہ بندوق نہیں ہو سکتی۔ ایک سوال اکثر کیا جاتا ہے کہ پشتون لوگوں کے پاس خود کو سماج کا اہم جزو…

Read more