تبدیلی کا سراب

کچھ لفظ ایسے بھی ہوتے ہیں جن کی سماعت فقط کانوں تک محدود نہیں ہوتی اُنہیں سنتے ہی سارے بدن میں سرسراہٹ محسوس ہوتی ہے دِل میں لہر سی اُٹھتی ہے اور تصور کی آنکھ خوش گمانی سے بھرپور منظر کشی کرنے لگتی ہے لفظ ” تبدیلی“ کی سنسنی خیزی بھی کچھ اتنی ہی طلسماتی…

Read more

واپسی کا راستہ بند ہے

یہ وہ دن تھے جب بچپن کی نرم اور کچی برف رفتہ رفتہ پگھل رہی ہوتی ہے، وقت کی کرنیں نیچے کی زمین کے سبھی نشیب و فراز اُبھار رہی ہوتی ہیں۔ موسموں میں ایک نیا پن سا محسوس ہونے لگتا ہے۔ زندگی اُس موڑ پر ہوتی ہے جہاں سے دور کھڑی منزلیں بھی سرنگوں…

Read more

ثمینہ تبسم کا ’نیا چاند‘

بدن پر خواہش کی ننھی شاخوں پر جب پھول کھلنے لگیں اور نگاہو ں کی برف پگھلنے لگے ، راتوں کے پچھلے پہروں میں جب نیند ٹوٹے تو شریر میں جس نئے جنم کی انگڑائی کا احساس جاگتا ہے وہ ایک عورت کے لیئے انسان ہونے کا ادراک ہے۔ اور جب وہ اپنی عمر کے…

Read more

نیلم احمد بشیر ، “طاﺅس فقط رنگ” اور امریکی خواب

نیلم احمد بشیر کا ناول ”طاﺅس فقط رنگ“ امریکہ کے پس منظر میں جدید انسان کی شناخت کا بحران بیان کرتا ہے۔ کوئی کہانی کیوں لکھتا ہے ۔؟۔۔ اگر اُسکے ذہن میں سوال ہیں یا جواب ۔۔ وہ اُنہیں من و عن قلم بند کیوں نہیں کر لیتا۔۔ کہانی کا کشت کاٹنا ضروری ہے کیا۔؟۔۔…

Read more