ڈھاکا ابھی نہیں ڈوبا

آزادی ہند کی بنیاد پر دو ممالک کا وجود میں آنا اس بات کا ثبوت تھا کہ اظہار رائے کی آزادی کو بالآخر فروغ ملے گا اور نو آبادیات کا سورج بس اب غروب ہوا ہی چاہتا ہے جس کی وجہ سے فرد کی فرد پر حکمرانی کو جائز تسلیم کر لیا گیا تھا لیکن…

Read more

شعر، بڑا شعر، شاعر اور نقاد

عرصہ دراز سے سنتے آئے تھے کہ نقد اگر کھرے کھوٹے کی پہچان کا نام ہے تو تنقید کو ہی مکھی کے کام سے بھی تشبیہ دی گئی ہے کہ وہ جسم پر بیٹھنے کے لئے ہمیشہ گندی جگہ کا انتخاب کرتی ہے مگر حالی، شبلی اور حسن عسکری جیسے ناقدین نے نہ صرف تنقیدی…

Read more

مجبور و محکوم کی سرگزشت

دنیائے فانی میں انسان کے مظالم کی داستان اتنی طویل ہے کہ اگر ان کا احاطہ کیا جائے تو پتہ چلتا ہے کہ ہر دور میں جبر کا ہتھیار ریاستوں کا نمائندہ رہا ہے۔ اگر ریاستی جبر کو قوم پرستی کی عینک سے دیکھا جائے تو اس بات کا اندازہ لگانا مشکل نہیں کہ ریاستوں…

Read more

اردو زبان و ادب کا مقامی بیانیہ

پروفیسر حسن عسکری مرحوم نے اردو ادب کی موت کا جو نعرہ مستانہ بلند کیا تھا، اس کی وجہ تسمیہ یہی تھی کہ اردو میں مقامی عناصر کی عدم موجودی نے کئی لوگوں کو اردو کے مستقبل کے حوالے سے تشویش میں مبتلا کردیا تھا اور آج انگریزی کے زیر اثر پروان چڑھتا ہمارا معاشرہ…

Read more

بھٹو کی ”اگر مجھے قتل کیا گیا“ سے نواز شریف کی ”اگر مجھے بدل دیا گیا“ تک

جمہوریت کی خاطر اپنی جان قربان کر دینے والے قائد عوام شہید ذوالفقار علی بھٹو کی کتاب اگر مجھے قتل کیا گیا زنداں نامہ سے زیادہ جمہوریت پرستوں کے لئے اکسیر کا درجہ رکھتی ہے جس میں جیل حکام کے رویے سے لے کر اپنی سیاسی میراث کی تقسیم کا ذکر ہے۔ برصغیر پاک و…

Read more

ہم کہاں جانا چاہتے ہیں؟

ایک زمانہ تھا کہ تجاوز کا لفظ ہی معاشرے میں ایک برائی سمجھا جاتا تھا، اگر کسی کے گھر کی منڈیر یا چار دیواری نقشے کے مطابق نہ ہوتی تو اسے محلے میں ناپسندیدہ نگاہ سے دیکھا جاتا تھا۔ کھیلتے ہو ئے بچے بھی اپنی حدود کا خیال رکھتے تھے اور اب حال یہ آن…

Read more