گیس بحران، عمران خان کی حکومت کا ایک غیر آئینی قدم؟

سندھ میں سی این جی اسٹیشنز کو غیر معینہ مدت تک کے لئے بند کریا گیا، یہ وہ خبر ہے جس نے کراچی سے کشمور اور کے ٹی بندر سے کارونجھر جھیل تک سندھ بھر کے باسیوں کو پریشان کردیا ہے۔ بات صرف سی این جی تک محدود نہیں، صنعتوں کو بھی گیس کی فراہمی تین ماہ تک بند کردی گئی ہے۔

سندھ میں 650 سی این جی اسٹیشنس ہیں، جن میں سے 300 صرف کراچی شہر میں ہیں، گیس فراہمی بند ہونے سے نہ صرف منی بسز، رکشا، ٹیکسی اور آن لائین ٹیکسی کا پہیہ بھی رکنے کے قریب ہوگیا ہے، بلکہ انٹرسٹی ٹرانسپورٹ بھی شدید متاثر ہوئی ہے۔ کراچی میں پبلک ٹرانسپورٹ پر سفر کرنے والوں کو گھنٹوں سڑکوں پر خوار ہوتے دیکھا گیا، جبکہ مڈل کلاس سے تعلق رکھنے والوں کی گاڑیاں پٹرول پر منتقل ہونے کی وجہ سے ان کی مالی مشکلات میں اضافہ ہوگیا ہے۔

Read more

کراچی: سپر ہائی وے پر ہائوسنگ سوسائٹی کے باہر احتجاج کس نے کروایا؟

کراچی میں ہائوسنگ سوسائٹی کے مین گیٹ کے سامنے ملازمین، الاٹیز اور ٹھیکیداروں کےاحتجاج نے نہ صرف لگ بھگ چھے گھنٹوں تک کراچی سے سندھ کے دیگر علاقوں تک ٹریفک کی آمدو رفت کو متاثر کیئے رکھا بلکہ ایک ایمبولینس میں مبینہ طور پر ایک بچہ بروقت علاج کی مطلوبہ سہولت نہ ملنے کی وجہ…

Read more

یوٹرن، دیسی مرغیاں، تفریحِ طبع یا کچھ اور؟

ابھی یوٹرن کے بیان پر لفظی گولا باری تھمی ہی نہیں تھی کہ جناب عمران خان کی طرف سے دیسی مرغیوں اور انڈوں کی افزائش کے حوالے سے دیئے بیان نے ملک کے سیاسی اور صحافتی افق پر میدان کو گرما دیا ہے۔ کرتارپور کے چھکے کا اثر تو ملتانی مخدوم کے گگلی نما بیان…

Read more

تجاوزات کے خلاف آپریشن: خدشات اور گذارشات

یوں تو تجاوزات کے خلاف آپریشن ملک کے مختلف حصوں میں ہونا تھا مگر ان کارروائیوں کی شدت پنجاب اور سندھ کے بڑے شہر کراچی میں کچھ زیادہ نظر آرہی ہیں۔ کراچی کی تاریخی عمارات کے ارد گرد تجاوزات ہٹانے کے عمل کے عمل کو نہ صرف سراہا گیا بلکہ ناقابل یقین بات یہ ہوئی کہ کوئی خاص مزاحمت بھی نظر نہیں آئی۔ ایمپریس مارکیٹ کے آس پاس ڈیڑہ سو کے لگ بھگ دکانیں گرائی گئیں اور کوئی ردعمل نظر نہیں آیا، جبکہ اس شہر کے ماضی پر نظر ڈالیں تو اس میں کئی جانیں جاسکتی تھیں۔

شہر کے کاروباری مرکز صدر کے آس پاس کی گلیوں سے تجاوزات ہٹانے کے لئے بلڈوزرس نکلے تو ناجائز قرار دی گئے دکانوں کے مالکان نے خود ہی سامان نکال کر گویا آپریشن پر رضامندی ظاہر کردی۔ آپریشن کے بعد کراچی کے میئر نے علاقوں کا دورہ کرنے کے بعد جس فاتحانہ انداز میں آپریشن کا کریڈٹ لینے کی کوشش کی اس سے بھی کئی سوالات جنم لے رہے تھے، کیونکہ اس بات کو بھی کوئی زیادہ وقت نہیں گزرا تھا کہ کراچی میں پاکستان کوارٹرز خالی کرانے کی کوشش پر سخت مزاحمت نظر آئی اور میئر کراچی کی جماعت متحدہ پاکستان کے رہنماؤں نے علاقہ مکینوں کے ساتھ پریس کانفرنس کرتے ہوئی کاررائیاں بند کرنے کا مطالبہ کیا اور متنبہ کیا کہ آئندہ ایسی کوشش ہوئی تو سخت مزاحمت کی جائے گی۔

Read more

کراچی کا قصور۔۔۔۔ مظہر عباس صاحب میری عرض سنیں

  جناب مظہرعباس صاحب میں آپکا بہت بڑا فین رہا ہوں اور آپ کے کالم اور تجزیے ہمیشہ میرے لئے کار آمد رہے ہیں مگر آپ کے ایک حالیہ کالم کے کچھ حصوں کا جواب دینے کی جسارت کر رہا ہوں، اس کا مطلب ہر گز یہ نہیں کہ آپ کے احترام میں کوئی کمی…

Read more

سندھ کا صوفیانہ مزاج نہیں بدلا

پرویزمشرف کی نام نہاد روشن خیال حکومت کا سورج غروب ہوتے ہی ملک میں جو دہشتگردی کی لہر اٹھی، اس نے پورے ملک کو اپنی لپیٹ میں لے لیا، مجھے زیادہ تو علم نہیں مگر بچپن کی یادیں تازہ کرتا ہوں تو ضیاء کی گیارہ سالہ آمریت کے خاتمے کے وقت بھی ہتھوڑا گروپ کا…

Read more

پیارے جیالے، تیار رہنا۔۔۔

میرے پیارے دوست جیالے، ذھانت اور ٹائمنگ کے لحاظ سے سیاسی فیصلے کرنا تو کوئی آپ کی قیادت سے سیکھے، بھئی مان گئے۔ 27 اکتوبر کی صبح سے ہی سپریم کورٹ میں جس طرح کی کارروائی دیکھنے کو ملی، انور مجید اور اس کے بھائی کو جیل میں جو مقام دینے کے احکامات صادر ہوئے،…

Read more

فیصل واوڈا کہتے ہیں کہ سندھ والوں کا پیٹ پھاڑ کر کراچی کا پانی لیں گے

اب یہ بات پورا ملک جان چکا ہے کہ تحریک انصاف میں ایسے کئی لوگ ہیں جو اپنے اعمال اور الفاظ سے نہ صرف حکومت کے لئے مسائل بڑھا رہے ہیں بلکہ ایسے لگتا ہے کہ اپنے کردار اور ذہنیت سے دن رات اس کوشش میں لگے ہوئے ہیں کہ کسی نہ کسی طرح عمران…

Read more

سوراب، بلوچستان میں ایرانی تیل کی باڑہ مارکیٹ

کراچی جانے والی سڑک پر کوئٹہ سے لگ بھگ 190 کلومیٹرز کے فاصلے پر واقع شہر سوراب کی ایک پہچان ڈیزل اور پٹرول کی اسمگلنگ بن چکی ہے، آپ اگر کوئٹہ سے کراچی سفر کریں تو آپ کو راستے میں ایرانی ساخت کی پک اپس آتی اور جاتی ملیں گی، جن پر کین بندھے ہوئے…

Read more

پاکستان میں می ٹو کا طوفان آنے کو ہے

جب امریکا اور خاص طور پرہالی ووڈ میں ’می ٹو‘ تحریک چلی تھی تو اندازہ ہوگیا تھا کہ یہ سلسلہ اب رکنے والا نہیں ہے، اب یہ سلسلہ بھارتی فلم انڈسٹری تک آن پہنچا ہے، گو کہ اس تحریک کو انڈیا پنہچنے میں ضرورت سے زیادہ دیر لگ گئی کیونکہ ایک تو عورتوں نے اب…

Read more