نیشنل کالج: برطانوی راج ِ کے خلاف مزاحمت کا استعارہ

برطانوی راج کے خلاف مزاحمت کی کہانی نیشنل کالج لاہورکے ذکر کے بغیر اُدھوری ہے۔یہاں یہ وضاحت ضروری ہے کہ یہ نیشنل کالج آف آرٹس کا قصہ نہیں‘ بلکہ اس نیشنل کالج کی کہانی ہے‘ جس نے ہندوستان کے نوجوانوں میں حریت کی جوت جگا کر انہیں فرنگی حکومت کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کربات…

Read more

نیشنل کالج: برطانوی راج ِ کے خلاف مزاحمت کا استعارہ

برطانوی راج کے خلاف مزاحمت کی کہانی نیشنل کالج لاہورکے ذکر کے بغیر اُدھوری ہے۔یہاں یہ وضاحت ضروری ہے کہ یہ نیشنل کالج آف آرٹس کا قصہ نہیں‘ بلکہ اس نیشنل کالج کی کہانی ہے‘ جس نے ہندوستان کے نوجوانوں میں حریت کی جوت جگا کرانہیں فرنگی حکومت کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کربات کرنے…

Read more

شکیل عادل زادہ: ایک خوابِ خوش رنگ

شکیل عادل زادہ کااولین تاثر ایک خوابِ خوش رنگ کا تھا ‘جس کی بُنَت میں بہت سے رنگ شامل تھے۔ اس کے 'سب رنگ‘ ڈائجسٹ نے مجھے اور مجھ جیسے بہت سوں کو اپنا اسیر بنا لیا تھا۔ اس کی نثر سب سے الگ اور سب سے جدا تھی۔ لفظوں کی اشرفیاں تراشنا اور اُجالنا…

Read more

چیلیانوالہ: پنجابی مزاحمت کا آخری مورچہ

تاریخ کے قدموں پرقدم رکھتاہوا میں آج چیلیانوالہ کے میدان کی طرف جارہاہوں، جہاں فرنگیوں کے خلاف پنجابی مزاحمت کی سب بڑی جنگ لڑی گئی تھی۔ کھاریاں سے 30 کلومیٹر کے فاصلے پرڈِنگہ اور وہاں سے 10کلو میٹر کی مسافت پر چیلیانوالہ کا قصبہ ہے۔ یہ جون کامہینہ ہے اورہوا رُک رُک کرچل رہی ہے۔…

Read more

راولپنڈی کی لال کُرتی

کبھی کبھی یوں ہوتا ہے‘ کسی جگہ کے تصورسے اس سے جڑی یادیں انگڑائی لے کے بیدار ہوجاتی ہیں۔ راولپنڈی کی لال کُرتی بھی ایک ایسی جگہ ہے‘ جس کے خیال سے بہت سی یادیں آنکھیں جھپکتی میرے ارد گرد آ بیٹھی ہیں۔ لال کُرتی کی میری اولین یاد میرا پرائمری سکول ہے‘ جو ماموں…

Read more

دیوان سنگھ مفتون کا حیرت کدہ

ایک دنیا ہمارے حواس کی دنیا ہے‘ جہاں کی اشیاء کو ہم اپنی عقل کی کسوٹی پر جانتے اور منطق کی میزان پرپرکھتے ہیں۔اس Physical دنیا سے ماورا ایک Metaphysical دنیا ہے۔ سراسر حیرت کدہ۔ جہاں کی اشیا نہ ہماری عقل کی کسوٹی پرجانی جا سکتی ہیں ‘نہ ہی منطق کی میزان پر پرکھی جاسکتی…

Read more

سرسید کالج: گہرے رنگوں اور مسحور کن خوشبو کا زمانہ

یہ ان دنوں کا قصہ ہے جب صبحیں بہت اجلی اور شامیں رنگوں میں ڈوبی ہوتی تھیں۔ جب پھولوں کے رنگ بہت گہرے اور اُن کی خوشبو بہت مسحور کن ہوتی تھی یا پھر شائد مجھے ایسا محسوس ہوتا تھا۔ انہی مہکتے دنوں میں ایک دن تھا جب میں سر سید کالج مال روڈ میں…

Read more

مظہر کلیم: پھر کب ملیں گے؟

کبھی کبھی دل کی خواہش دل ہی میں رہ جاتی ہے۔ شاید ہر خواب کو تعبیر نہیں ملتی۔ ایک برس پہلے کی بات ہے‘ ایک کام کے سلسلے میں ملتان جانے کا اتفاق ہوا۔ ملتان شہر کی اپنی ایک تاریخ ہے جو قدیم بھی ہے اور دلچسپ بھی۔ ملتان جائیں تو ضروری ہے برادرم خالد…

Read more

جلتی دھوپ میں چھائوں جیسا تھا وہ

وہ بھی کیسے دن تھے جو پلک جھپکتے میں ہوا ہو گئے۔ اب کتنا بھی چاہیں وہ دن پھر لوٹ کر نہیں آئیں گے۔ یہ ان دنوں کا قصہ ہے جب میں دوسری کلاس میں پڑھتا تھا۔ اسی سکول میں انعام بھائی چھٹی جماعت میں تھے۔ ہماری عمروں میں اتنا ہی فرق تھا۔ سارا دن…

Read more

آئین کا آرٹیکل 25 (الف) اور ہمارے بچوں کی تعلیم

سپریم کورٹ کے چیف جسٹس عزت مآب میاں ثاقب نثار نے ایک مقدمے کی سماعت کے دوران اہم آبزرویشن دی کہ آئین کا آرٹیکل 25-A جو لازمی (Compulsory) اور مفت (Free)تعلیم کی ضمانت دیتا ہے کیا وہ صرف نمائش کے لیے ہے؟ ا نہوں نے مزید کہا کہ تعلیم سب سے ارفع زیور ہے۔تعلیم تک…

Read more