فورٹی رولز آف لو پر تبصرہ

”محبت زندگی کا پانی ہے اورمحبوب کی روح آگ ہے، اور جب اسی آگ کو پانی سے محبت ہو جائے تو کائنات کا رخ بدل کر رہ جاتا ہے“۔

ایک جادوئی، مسحورکن، دل کی تہوں میں طوفان برپا کر دینے والی تحریر جو ایک ترکش مصنفہ ایلف شفق کے قلم سے نکلتی ہے اور قاری پر اپنی ایسی تاثیر چھوڑ تی ہے کہ آپ پہلے لفظ سے خود کو بھول کر مصنفہ کے وجود میں سرایت کر جاتے ہیں اور اس کی تحریر کی دھڑکن کے ساتھ ساتھ رہڑکنے لگتے ہیں۔ قاری ایک ہی وقت میں اکسویں صدی کی یہودی عورت کی گھریلو، خوبصورت اور مکلمل زندگی کے ستم سہتا اور اس کی شناخت کے سفر میں اس کے حوصلے دیکھتا ہے تو ساتھ ہی ساتھ تیرہویں صدی عیسوی کے درویش کے ساتھ صحراوں کی خاک چھانتا، عشق کے عین سے قاف تک کے سبق سکھاتا، فلسفی کو اس کے مرتبے سے اتار کر شاعر، رقاص اور ملنگ بناتا، تڑپاتا، سِسکتا اور فنا ہو جاتا ہے۔ قاری دو مختلف صدی کے دو مختلف کرداروں میں ایک روح ایک وجود کی شبیہ دیکھتا ہے۔ ایمان اور یقین جو دنیاییں بدل دیتا ہے لہروں کے رخ موڑ دیتا ہے اور۔ عشق حقیقی جو توڑ کر جوڑ دیتا ہے، بگاڑ کے بعد تعمیر دیتا ہے اور فناییت کے بعد امر ہو جاتا ہے۔

Read more

کمزور مائیں، غیر محفوظ بچے

بہت ہی پرانی بات ہے کہ ”ملک کی پچاس فی صد سے زائد عورت کی تعداد کو مضبوط کیے بغیر کوئی ریاست ترقی نہیں کر سکتی“۔ نئی بات یہ ہے کہ ”مضبوط عورت کے بغیر آپ کی فیملی محفوظ نہیں ہو سکتی“۔ محفوظ بچوں کے لئے ایک مضبوط ماں بہت ضروری ہے۔ ہمارے ملک کی…

Read more

عرب امارات اور ڈرائیونگ لائسنس

سونے کے لئے لیٹتی ہوں تو ہزاروں چھوٹی بڑی گاڑیاں سر کے اوپر سے بھاگنے لگتی ہیں۔ ڈراونے ٹرالر، موٹے موٹے ڈرم مکسر، لوڈرزاور خوفناک ڈراؤنی آنکھوں والی اونچی اونچی کرینیں، گاڑی کے بیک ویو مرر سے غرانے لگتے ہیں اور جو گھنٹہ ڈیڑھ گھنٹہ مجھے سستانے کو ملتا ہے میں اس میں ساری ٹریفک کے بیچ میں پھنسی اپنی چھوٹی سی گاڑی کسی کھائی میں، کسی لینڈ سلائیڈنگ کی نکڑ پر یا کسی گہری کھائی کی پگڈنڈی پر چلانے کی کوشش کرتی رہتی ہوں۔

یہ میرے کوئی ڈراؤنے خواب نہیں بلکہ ڈرائیونگ ٹرینگ کلاس کے بعد آنے والے وہ ہچکولے ہیں جو اگلے کئی گھنٹوں تک جاگتے میں یا سستاتے مجھے جھٹکے دیتے رہتے ہیں خصوصاً تب جب میں کم سے کم دو تین گھنٹے کی نیند کے بعد خود کو تازہ دم نہ کر سکوں۔ اس کی وجہ وہ ڈرائیونگ کی ٹرینگ کلاس ہے جو مجھے مسلسل دو گھنٹے کے لئے شہر کی مصروف ترین موٹر ویز پر بڑی بڑی لینڈ کروزرز، رینج روور، پیٹرول اور شہر کی بدترین ٹریفک والے انڈسٹریل ایریا میں دنیا کے بھاری بھاری دیوہیکل ٹرالرز کے بیچ چلانی پڑتی ہے۔ اور یہ ڈرائیونگ ٹرینگ کلاس جو مجھے ایک کار لائسنس لینے کے لئے درکار ہے، کوئی خالہ جی کا باڑہ نہیں، اس کی ایک خطرناک کہانی ہے۔

Read more

الف، آڈیو اور عمیرہ احمد

جس دن میری دوست نے مجھے عمیرا احمد کا نیا ناول الف پڑھنے کے لئے بھیجا۔ میں ذرا چلتے پھرتے کاموں میں لگی تھی۔ میرے پاس ان کے ناول کی آڈیو کا لنک آیا تھا۔ میں نے سوچا چلتے پھرتے کام کرتے ساتھ ساتھ سن لیتی ہوں۔ میں نے اسے آن کیا۔ مگر پھر کچھ…

Read more

بشریٰ بی بی اور پاکستانی عورت کو پڑنے والی گالی

تو پاکستان میں یہ رسم ٹھہری کہ مرد کے حصے کی گالی ہمیشہ عورت ہی کھائے گی۔ چاہے کسی مرد کا قتل ہو، کسی عورت کا ریپ ہو، کسی کے گھر ڈاکہ ڈکیتی ہو، یا کوئی ذاتی، سماجی اور سیاسی دشمنی ہو سزا کے لئے عورت کو ہی چنا جائے گا۔ الہٰی تو نے برصغیر…

Read more

سرمہ ہے ميری آنکھ کا خاک مدينہ و نجف

روضہ رسول سے اٹھ کر واپس ہوٹل کی طرف لوٹنا اک کڑا مرحلہ تھا مگر ستم یہ تھا کہ دن بھر کے سفر کی تھکاوٹ تھی ، تہجد کی نماز مسجد نبوی میں ادا کرنے کی شدید چاہت تھی تو اسی دوپہر عمرے کی روانگی بھی تھی ۔گھڑی دو گھڑی کا آرام نہ کرتے تو…

Read more

زہے مقدر حضور حق سے سلام آیا، پیام آیا

1۔ زہے مقدر: کیا واقعی دو ہفتے بعد میری زندگی بدلنے والی ہے؟ اس کتاب کا وہ صفحہ الٹنے والا ہے جس کی راہ میں ہزارہا قسم کے مسائل الجھے ہوئے تھے۔ یہ سوال میں نے اپنے جرنل پر تب لکھا جب مجھے شکے تھا کہ میاں صاحب کا ارادہ بدلے گا، ویزہ نہیں لگے…

Read more

اکیسویں صدی کے لیڈر کی نیلے چاند سی تقریر

صبح جب سارا پاکستان اسمبلی کے اہم ترین اجلاس کے لئے ٹی وی کے سامنے بیٹھا لمحہ لمحہ کی کارروائی پر نظر ٹکائے ان اہم لمحات کا منتظر تھا جس کے خواب کم سے کم اکیسویں صدی کی نسل کی پلکوں پر اک عرصے سے پل رہے تھے تو نوجوت سنگھ سدھو کی پاکستان آمد…

Read more

تبدیلی ابھی نہیں آئے گی

یہ اخذ کیا ہم نے جب الیکشن کے روز ملنے جلنے والے سب سمجھدار ،باشعور،اعلی تعلیم یافتہ،ہر خبر پر نظر رکھنے والے،ہر بحث میں حصہ لینے والے ،ہر نئی کتاب پڑھنے والے،بڑے بڑے ناموں اور کتابوں کے حوالے دینے والے سب احباب سے انکے ووٹ کی داستان سننا چاہی کہ ہم تو ٹھہرے پردیسی ہمارا…

Read more

بے شعور ووٹ کی کوئی توقیر نہیں

الیکشن کے دن جیسے جیسے قریب آ رہے ہیں ہر شخص ،ہر فرد اور ہر ادارے نے جان توڑ کوشش کر رکھی ہے کہ جس طرح سے ممکن ہو سکے اپنے اختیار، اپنی اہلیت اور اپنی طاقت کی طاقت کو جس حد تک ممکن ہو سکے استعمال کر لے۔ اگر کوئی صحافی یا لکھاری ہے…

Read more