ارزاں ہے وطن کے سپوتوں کا لہو

گذشتہ دو ہفتوں سے پاکستان اور برادر ہمسایہ ملک افغانستان کے تعلقات سخت سفارتی تناؤ کا شکار ہیں۔ معاملہ ہی ایسا سنگین نوعیت کا ہے جس نے مضبوط برادرانہ تعلقات میں دراڑ ڈال دی ہے۔ افغان شہر جلال آباد کے پولیس چیف داؤد خان جو نجی مصروفیات کی بنا پر کابل میں موجود تھے، کو اغوا کر لیا گیا۔ یہ خبر افغان صدارتی محل پر بجلی بن کر گری۔ افغان صدر اشرف غنی نے فوراً وزیراعظم عمران خان کو فون کر کے معاملے کی سنگینی کا احساس دلایا۔

چند دن لا پتہ رہنے کے بعد داؤد خان کی لاش پشاور سے ملی۔ اس خبر کا سننا تھا کہ افغان صدر نے پاکستان کے خلاف سخت بیانات دینے شروع کر دیے، بھارتی میڈیا جو ایسی پاکستان مخالف خبروں کی ٹوہ میں رہتا ہے، فوراً پاکستان کے دہشت گرد ریاست ہونے کا راگ الاپنا شروع کر دیا۔ افغانستان نے اپنی فوجیں پاکستانی سرحد پر جمع کرنی شروع کر دیں۔ اغوا اور پھر قتل ہونے والا شخص کوئی عام آدمی نہیں تھا، ایک اہم افغان شہر کا پولیس چیف تھا۔

Read more