بھابھی نے قربانی نہیں دی

یہ اُن دنوں کی بات ہے جب شباب نے میری دہلیز پہ اپنے قدم جمانے شروع کِئیے تھے۔ میرا قد سرو ایسا لمبا اور جسم کمان کی طرح تن گیا تھا۔ ایسے میں اب لڑکوں سے بھرے کالج میں بھی دل نہی لگتا تھا۔ کلاسیں چھوڑنے پہ حاضری کے پیشِ نظر پرنسپل نے مجھے کالج…

Read more