کافی وِد کرن میں متنازع بیان، انڈین کرکٹرز پانڈیا اور راہُل مشکل میں


ٹی وی ٹاک شو کافی وِد کرن میں خواتین کے بارے میں دیے گئے متنازع بیانات کے بعد انڈین کرکٹ ٹیم کے آل راؤنڈر ہاردِک پانڈیا اور لوکیش راہُل پر شدید تنقید ہوئی، یہاں تک کہ دونوں پر دو ون ڈے میچز کی پابندی بھی لگانے کی سفارش کی گئی ہے۔

یہ سفارس بی سی سی آئی کی انتظامی کمیٹی کے سربراہ ونود رائے نے کی ہے۔

ساتھ ہی اس کمیٹی کی رکن اور انڈیا کی خواتین کی کرکٹ ٹیم کی سابق کپتان ڈیانا ایڈُلجی نے معاملے کو بی سی سی آئی کی قانونی سیل کے پاس بھیج دیا ہے۔

حالانکہ پانڈیا نے اس بارے میں معافی بھی مانگ لی تھی۔ انہوں نے ایک ٹویٹ میں لکھا کہ وہ شو کے فورمیٹ کی وجہ سے جذبات میں بہہ گئے تھے۔

https://twitter.com/hardikpandya7/status/1082823344662171649

خواتین کے بارے میں کی گئی ان کی متنازع باتوں کو سوشل میڈیا پر خواتین مخالف بھی کہا گیا تھا۔

اس شو میں پہلی بار کسی کرکٹر نے حصہ لیا تھا۔ ہاردِک پانڈیا کے علاوہ کے ایل راہُل بھی اس شو میں شریک تھے۔

شو میں پانڈیا کی کہی گئی باتوں کو خواتین مخالف اور سیکسِسٹ کہہ کر ان پر بہت تنقید کی گئی۔ اس کے بعد انڈین کرکٹ کنٹرول بورڈ یا بی سی سی آئی نے پانڈیا اور راہُل کو بدھ کو شو کاز نوٹس جاری کیا تھا۔

دونوں کھلاڑیوں کو 24 گھنٹے کی مہلت دی گئی تھی۔

اس کے بعد دونوں نے جواب میں بورڈ اور انتظامی کمیٹی سے معافی مانگی۔

کھلاڑیوں کے جواب پر ونود رائے نے انڈین خبر رساں ادارے پی ٹی آئی کو بتایا، ’میں ہاردِک کی وضاحت سے مطمئن نہیں ہوں اور میں نے دونوں پر دو میچز کی پابندی کی سفارش کی ہے۔ حالانکہ معاملے میں ڈیانا ایڈُلجی کی ہری جھنڑی کے بعد ہی آخری فیصلہ ہوگا۔‘

رائے نے کہا، ’ڈیانا ایڈُلجی نے اس معاملے میں قانونی رائے مانگی ہے کہ کیا دونوں کھلاڑیوں پر پابندی لگائی جا سکتی ہے۔ اس لیے فیصلے تب کیا جائے گا جب قانونی صورت حال واضح ہو جائے۔ جہاں تک میرا سوال ہے یہ بیانات احمقانہ، خراب اور ناقابل قبول ہیں۔‘

اطلاعات کے مطابق ڈیانا ایڈُلجی نے اس بارے میں بی سی سی آئی کے قائم مقام سربراہ سی کے کھنا، قائم مقام سیکرٹری امیتابھ چوہدری اور خزانچی انیرُدھ چوہدری سے بھی رائے مانگی ہے۔

پانڈیا نے شو میں خواتین کے ساتھ تعلقات بنانے کے بارے میں دعوی کیا اور یہ بھی بتایا کہ وہ اس بارے میں اپنے والدین سے کتنا کھل کر باتیں کرتے رہے ہیں۔

دونوں کرکٹرز ہفتے کے روز آسٹریلیا کے خلاف شروع ہونے والی تین ون ڈے میچز کی سیریز میں انڈین ٹیم کا حصہ ہیں اور اس وقت ٹیم کے ساتھ اسٹریلیا میں موجود ہیں۔

image_pdfimage_print
Comments - User is solely responsible for his/her words


اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ ”ہم سب“ ایک مثبت سوچ کو فروغ دے کر ایک بہتر پاکستان کی تشکیل میں مدد دے رہا ہے تو ہمارا ساتھ دیں۔ سپورٹ کے لئے اس لنک پر کلک کریں

بی بی سی

بی بی سی اور 'ہم سب' کے درمیان باہمی اشتراک کے معاہدے کے تحت بی بی سی کے مضامین 'ہم سب' پر شائع کیے جاتے ہیں۔

british-broadcasting-corp has 7187 posts and counting.See all posts by british-broadcasting-corp