نومولود بچے کی لاش کو قبر سے نکال کر بھیک مانگنے والا گرفتار

شہزاد ملک - بی بی سی اردو ڈاٹ کام، اسلام آباد

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

بھیک مانگنے کے لیے نومولود بچے کی لاش قبر سے نکال لی

Getty Images
بھیک مانگنے کے لیے نومولود بچے کی لاش قبر سے نکال لی

لاہور پولیس نے ایک شخص کو گرفتار کیا ہے جو ایک نومولود بچے کی لاش کو قبر سے نکال کر بھیک مانگ رہا تھا۔ پولیس نے ملزم کے قبضے سے نومولود بچے کی لاش بھی برآمد کر لی ہے۔

تھانہ بادامی باغ کے سٹیشن ہاؤس آفیسر سہیل کاظمی نے بی بی سی کو بتایا کہ بادامی باغ کے رہائشی شجاع الرحمن کے ہاں شادی کے سات سال کے بعد بیٹا پیدا ہوا جو کہ پیدائش کے فوری بعد انتقال کرگیا۔

یہ بھی پڑھیے

’منشیات فروشوں کی ٹانگیں توڑ دیں‘: ترک وزیر داخلہ

’ذہنی اور دوستوں کا دباؤ منشیات کے استعمال کی اہم وجہ‘

اُنھوں نے کہا کہ نومولود بچے کی تدفین کردی گئی۔ مقامی پولیس کے مطابق تدفین کے چند ہی گھنٹوں کے بعد جب اس کا والد اور دیگر رشتہ دار نومولود بچے کی قبر پر پھولوں کی چادر چڑھانے کے لیے گئے تو دیکھا تو نومولود بچے کی قبر کھدی ہوئی تھی اور وہاں سے لکڑیوں کے علاوہ نومولود بچے کی لاش بھی غائب تھی۔

ایس ایچ او تھانہ بادامی باغ کے مطابق پہلے تو گھر والوں نے سمجھا کہ شائد کوئی جنگلی جانور یا آوارہ کتے نومولود بچے کی لاش کو نکال کر لے گئے ہیں لیکن پھر اُنھوں نے اس واقعہ سے متعلق مقامی تھانے میں اطلاع دی۔

پولیس کے مطابق اس واقعہ سے متعلق رپورٹ درج کرنے کے بعد مقامی گورکن کو بھی شامل تفتیش کرنے کے ساتھ ساتھ لاہور کے مختلف علاقوں میں واقع مزاروں کے باہر بھی لوگوں کی چھان بین کی گئی۔

پاکستانی قبرستان

Getty Images
پاکستانی قبرستان

پولیس اہلکار کا کہنا تھا کہ پیٹرولنگ پر موجود پولیس اہلکاروں نے ایک مشکوک شخص کو حراست میں لیا جس کی گود میں ایک نومولود بچہ تھا۔ بعدازاں جب اسے تھانے منتقل کیا گیا تو بچہ پہلے سے ہی مردہ تھا۔

گرفتار ہونے والے شخص کا نام الیاس بتایا گیا ہے اور وہ پیشہ وار بھکاری ہے۔ مقامی پولیس کا کہنا ہے کہ دوران تفتیش ملزم نے پولیس کو بتایا کہ جب نومولود بچے کی لاش کی تدفین کر رہے تھے تو وہ اس وقت قریب ہی موجود تھا اور اس کو دفنانے کے بعد جب سب لوگ وہاں سے چلے گئے تھے تو اس نے رات کے اندھیرے میں قبر کھود کر بچے کی لاش نکالی اور پہلے اس کا کفن بیچا اور پھر اس کے بعد بس سٹینڈ پر بھیک مانگنے کا ارادہ تھا۔

پولیس نے ملزم کے خلاف مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کردی ہے اور مقامی پولیس کا کہنا ہے کہ جن دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے وہ ناقابل ضمانت جرم ہے اور جرم ثابت ہونے پر مجرم کو دس سال تک قید کی سزا ہوسکتی ہے۔

پاکستان کے سب سے بڑے صوبے پنجاب میں قبروں سے مردوں کو نکال کر ان کی بےحرمتی کرنے کے متعدد واقعات ہوچکے ہیں اور پولیس حکام کے مطابق ایسے مقدمات میں ملوث متعدد ملزمان صوبے کی مختلف جیلوں میں قید ہیں۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

بی بی سی

بی بی سی اور 'ہم سب' کے درمیان باہمی اشتراک کے معاہدے کے تحت بی بی سی کے مضامین 'ہم سب' پر شائع کیے جاتے ہیں۔

british-broadcasting-corp has 10738 posts and counting.See all posts by british-broadcasting-corp