#KFCWedding: جنوبی افریقہ میں کے ایف سی میں شادی کی پیشکش، جوڑے کی موجیں

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

جنوبی افریقہ میں لوگ ایک ایسے جوڑے کی شادی میں مدد کی پیش کش کررہے ہیں جن کی معروف فوڈ چین کے ایف سی میں کھانا کھاتے ہوئے شادی کی پیش کش کرنے والی ویڈیو سوشل میڈیل پر وائرل ہو گئی تھی۔

ویڈیو میں ایک لڑکے کو اپنے گھٹنے پر بیٹھ کر ایک لڑکی کو انگوٹھی پیش کرتے ہوئے دیکھا جاسکتا ہے۔

جنوبی افریقہ میں کے ایف سی نے اس ویڈیو کو سوشل میڈیا پر شیئر کیا اور عوام سے اس جوڑے کو تلاش کرنے میں مدد مانگی تھی۔

مزید پڑھیے

تقسیم کی ایک نامکمل محبت کی کہانی

ایک پناہ گزین اور قوم پرست کی محبت کی کہانی

جنگ کے دنوں میں محبت

ٹوئٹر پر اس پوسٹ کو 17000 سے زیادہ مرتبہ ری ٹویٹ کیا گیا جس کے بعد ہیش ٹیگ #KFCProposal اور #KFCWedding ٹرینڈ کر رہا ہے۔

https://twitter.com/KFCSA/status/1192359716955009024

انٹرنیٹ پر کے ایف سی کی پوسٹ کے بعد جلد ہی اس جوڑے کی شناخت ہوگئی اور ان کا نام بھٹ ہیکٹر اور نونہلانہلہ ہے۔

لیکن کہانی یہاں ختم نہیں ہوئی۔

دیکھتے ہی دیکھتے دیگر لوگ اس شادی میں مدد کی پیش کش کرنے لگے جس میں لوگوں نے جوڑے کے لیے شادی کی جگہ، ہنی مون اور شادی کے دن پرفارمنس تک کی پیش کش کی گئی ہے۔

مشہور گلوکار زیکس بنتونی نے ایک ٹویٹ میں لکھا ’میں شادی کے دن بغیر کسی فیس پرفارم کرنے کی پیشکش کرتا ہوں۔‘

https://twitter.com/ZakesBantwiniSA/status/1192729444944924673

اس کے بعد مشہور کمپنیوں نے تحائف کی بارش کر دی۔

معروف کار بنانے والی کمپنی آڈی نے بھی موقع کے فائدہ اٹھاتے ہوئے ٹوئٹر پر پیغام جاری کیا کہ ‘ہنی مون کی یہ منزلیں بہت دور لگتی ہیں۔ کسی کو چاہیے انھیں وہاں لے جائے۔ ہم یہ کرنے کو تیار ہیں۔‘

https://twitter.com/audisouthafrica/status/1192736581603528704

ڈرم ميگزین نے ٹویٹ کیا ’ہم ان کے ساتھ کومزید خوبصورت بنانا چاہیں گے۔‘

’ہم خوشی کے ساتھ اپنے ميگزین کے دو صفحات انھیں اپنی خوبصورت کہانی بیان کرنے دیں گے۔‘

https://twitter.com/DrumMagazine/status/1192732037578461184

اس جوڑے کو موصول ہونے والی پیشکش میں مشروبات سمیت کھانا بنانے کے برتن اور کھیل کے ملبوسات بھی شامل ہیں۔

انھیں ہزاروں پاؤنڈز بھی عطیہ کے طور پر دینے کی پیش کش کی گئی ہے۔

کاٹیکا مالوبولا کے مطابق وہ ایف سی سے گزر رہے تھے جب انہوں نے یہ ویڈیو بنائی اور بعد میں اسے سوشل میڈیا پر شائع کیا۔

انھوں نے سوشل میڈیا پر اس ردِ عمل کے حوالے سے کہا کہ وہ جنوبی افریقہ کی عوام کے اس ردعمل سے بہت خوش ہوئے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ’میں نے یہ ویڈیو بنائی اور اپنے ایک واٹس گروپ کو بھیجی اور کہا کہ ذرا یہ دیکھو۔ اس کے بعد میں نے اس کے بعد فیس بک اور انسٹاگرام پر لگا دیا۔ پھر کیا تھا۔‘

اس جوڑے نے اپنے چاہنے والوں کے لیے فیس بک لائیو کے ذریعے شکریہ ادا کیا ہے۔

بھٹ ہیکٹر نے کہا کہ ان کی شادی سنہ 2012 میں ہوئی تھی لیکن انھیں وہ انگوٹھی پسند نہیں تھی جو اس نے دلہن کے لیے شادی کے وقت خریدی تھی۔ وہ اپنی اہلیہ کے لیے ایک بہتر انگوٹھی خریدنا چاہتے تھے۔

https://twitter.com/KFCSA/status/1193122235483074560

ہیکٹر کا کہنا تھا کہ ‘میں نوکری نہیں کرتا ہوں تو میرے پاس نونہلانہلہ کے لیے شادی کی ایک اچھی سی انگوٹھی خریدنے کے لیے رقم نہیں تھی لیکن میں پھر بھی اس کے لیے کچھ کرنا چاہتا تھا۔‘

جوڑے نے کہا کہ ‘شکریہ ،جنوبی افریقہ! آپ کی محبت نے ہمارے دل کو چھو لیا ہے۔ ہم کبھی تصور بھی نہیں کرسکتے تھے کہ ہماری محبت کی کہانی نے اتنے سارے لوگوں کو متاثر کیا ہے۔’

https://twitter.com/Jidenna/status/1192947437478039555

ایک صارف نے لکھا کہ ٹرینڈ #KFCProposal دل موہ لینے والا ٹرینڈ ہے۔

https://twitter.com/mihlalii_n/status/1192881036994187265

ابانتو کتاب فیسٹیول نے لکھا کہ اگر جوڑے کو کسی نے اب تک کتابیں نہیں دیں تو ہم اس حوالے سے افریقی ادب سے متعلق کتابوں کی لائبریری انھیں تحفے میں دے سکتے ہیں۔

https://twitter.com/Abantu_/status/1193035665887440896

ایک مصور نے ٹوئٹر پر لکھا کہ وہ اس جوڑے کی پوٹریٹ پینٹنگ بنا کر انھیں تحفہ دیں گے۔

https://twitter.com/Lebani_Sirenje/status/1193068315557728256

ایک ریڈیو سٹیشن نے لکھا کہ وہ اس جوڑے کو 12 کاؤنسلنگ سیشن دے سکتے ہیں تاکہ ان کی شادی کے بعد کی زندگی اچھی گزرے۔

https://twitter.com/kayafm95dot9/status/1192887132001652736

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

بی بی سی

بی بی سی اور 'ہم سب' کے درمیان باہمی اشتراک کے معاہدے کے تحت بی بی سی کے مضامین 'ہم سب' پر شائع کیے جاتے ہیں۔

british-broadcasting-corp has 12293 posts and counting.See all posts by british-broadcasting-corp