انوراگ کشیپ: ‘یہ کنگنا مجھ سے برداشت نہیں ہو رہی‘

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

بالی وڈ کے معروف ہدایتکار انوراگ کشیپ نے ٹوئٹر پر اداکارہ کنگنا رناوت کے بارے میں ایک ساتھ کئی ٹوئیٹز کی ہیں۔

کنگنا گزشتہ ایک ماہ سے ایک بار پھر سرخیوں میں ہیں۔

اداکار سُشانت سنگھ راجپوت کی موت کے بعد سے وہ اقربا پروری اور فلم مافیا جیسے موضوعات پر اپنی رائے سوشل میڈیا اور نیوز چینلز کو انٹرویوز میں دے رہی ہیں۔

سوشل میڈیا پر جہاں ایک جانب ان کی زبردست مزمت کی جاتی ہے وہیں دوسری جانب ان کا بھرپور ساتھ دینے والوں کی بھی کمی نہیں ہے۔

انوراگ کشیپ نے ٹویٹ کیا کہ ‘کل کنگنا کا انٹرویو دیکھا۔ ایک دور میں میری بہت اچھی دوست ہوا کرتی تھی۔ میری ہر فلم پر آ کر میرا حوصلہ بڑھاتی تھی۔ لیکن اس نئی کنگنا کو میں نہیں جانتا۔ اور ابھی اس کا یہ خوفناک انٹرویو بھی دیکھا جو منیکرنِکا کی ریلیز کے بالکل بعد کا ہے۔’

 

انوراگ نے دوسری ٹویٹ میں کہا ‘کامیابی اور طاقت کا نشہ ہر کسی کو برابر بہکاتا ہے، چاہے وہ انسائڈر ہو یا آوٴٹسائڈر۔ ’مجھ سے سیکھیے، میرے جیسا بنیے۔‘ یہ بات میں نے 2015 سے پہلے اس کے منہ سے کبھی نہیں سنی۔ اور تب سے اب تک بات یہاں آ پہنچی ہے کہ جو میرے ساتھ نہیں ہیں وہ سب چاپلوس ہیں۔’

انوراگ نے کنگنا کے بارے میں یہ بھی ٹویٹ کیا کہ ‘اپنے سبھی ڈائریکٹرز کو گالی دیتی ہے، جو ایڈٹ میں بیٹھ کر سبھی ساتھ کام کرنے والے اداکاروں کے رول کاٹتی ہے۔ اس کے پرانے ڈائریکٹرز، جو ماضی میں اسے پسند کرتے تھے، اب اس کے ساتھ کام کرنے سے دور بھاگتے ہیں۔ ‘

کنگنا رناوت کی طرفداری کرنے والوں کو بھی انوراگ کشیپ نے اپنے ٹویٹ میں حدف بنایا۔ انہوں نے لکھا ‘کنگنا کو آئینہ نہ دکھا کر،اسے سر پر چڑھا کر، آپ اسی کو ختم کر رہے ہیں۔ مجھے اور کچھ نہیں کہنا ہے۔ کیا بکواس کر رہی ہے؟ کچھ بھی بنا سر پیر کی باتیں بول رہی ہے۔ اس سب کا خاتمہ یہیں ہوگا۔ چونکہ میں اُس کنگنا کو مانتا ہوں، یہ کنگنا مجھ سے برداشت نہیں ہو رہی ہے۔’

انوراگ کا الزام کہ لوگ کنگنا کا استعمال کر رہے ہیں

اپنی ٹویٹ میں انہون نے لکھا کہ ‘میں بولوں گا کہ ٹیم کنگنا بہت ہو گیا۔ اگر یہ تمہارے گھر والوں کو بھی نہیں دکھتا، اور تمہارے دوستوں کو بھی نہیں دکھتا تو پھر ایک ہی سچ ہے کہ ہر کوئی تمہارا استعمال کر رہا ہے اور تمہارا آج اپنا کوئی نہیں ہے۔ تمہاری مرضی، مجھے جو گالی بکنی ہے بکو۔’

ٹیم کنگنا نے بھی انوراگ کو ٹوئٹر پر ہی جواب دیا۔ ٹیم کنگنا نے لکھا ‘یہ مِنی مہیش بھٹ کنگنا کو بتا رہے ہیں کہ وہ فرضی لوگوں سے گھری ہوئی ہے، جو اس کا استعمال کر رہے ہیں، ملک کے مخالف اور اربن نکسل جس طرح شدت پسندوں کا تحفظ کرتے ہیں اسی طرح اب وہ مووی مافیا کی حفاظت کر رہے ہیں۔’

اس کے بعد اداکار کمال خان اور رنویر شوری جیسے اداکار بھی بحث میں شامل ہو گئیں۔

کمال خان نے ٹویٹ کیا کہ ‘انوراگ کشیپ، آپ دنیا کو بتائیں گے کہ بالی وڈ میں آپ کے اپنے کون ہیں؟ سلمان گروپ؟ یش راج گروپ؟ یا کرن جوہر گروپ؟’

ایک صارف کیرتی چترانشی نے انوراگ سے پوچھا ‘اگر آپ کو کنگنا کی واقعی فکر ہے، تو اچھا نہیں ہوتا کہ اگر آپ اسے میسیج بھیجتے؟’

انوراگ نے اس کا جواب دیا ‘پہلی بار ٹیکسٹ کیا تھا۔۔۔اس نے ٹوئٹر پر ڈال دیا۔ اس کے بعد سے وہ اسی جگہ مجھ سے بات کرتی ہے۔۔۔یہ ایک سال پہلے کی بات ہے۔’

کنگنا گزشتہ کچھ عرصے سے مسلسل تنازعات سے گھری رہی ہیں۔ گزشتہ دنوں انہوں نے ایک اور اداکارہ کے بارے میں کہا تھا کہ ‘تاپسی اور سوارا جیسے لوگ کہہ دیں گے کہ انہیں اقربا پروری سے کوئی مسئلہ نہیں ہے۔ انہیں کرن جوہر پسند ہے، لیکن پھر بھی آپ جیسی بی گریڈ اداکارہ، جو دکھنے میں ٹھیک ٹھاک ہیں، انہیں کام کیوں نہیں ملتا؟’

سورا بھاسکر نے ٹویٹ کر کے کنگنا کو اس بات کا جواب دیتے ہوئے کہا تھا کہ ‘ضرورت مند آوٴٹ سائڈر، بی گریڈ اداکارہ، لیکن عالیہ بھٹ اور اننیا پانڈے سے اچھی دکھنے والی اور ان سے بہتر اداکار بھی۔ کل ملا کر مجھے لگتا ہے کہ یہ تعریف ہے۔ شکریہ کنگنا، مجھے لگتا ہے کہ آپ خوبصورت ہیں، ایک اچھی اداکارہ ہیں اور اچھی انسان بھی۔ ہمیشہ چمکتی رہیے۔’

انوراگ سے متعلق یہ سنیے

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

بی بی سی

بی بی سی اور 'ہم سب' کے درمیان باہمی اشتراک کے معاہدے کے تحت بی بی سی کے مضامین 'ہم سب' پر شائع کیے جاتے ہیں۔

british-broadcasting-corp has 14622 posts and counting.See all posts by british-broadcasting-corp