ذاکر نواز: برطانیہ میں قتل کے الزام میں مطلوب ملزم چار سال بعد ناروے سے گرفتار

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

برطانیہ میں مطلوب قتل کے ایک ملزم کو چار سال بعد ناروے سے گرفتار کیے جانے کے بعد اب اس پر فرد جرم عائد کر دی گئی ہے۔

عبداللہی شائر پر الزام ہے کہ وہ 21 سالہ ذاکر نواز پر چاقو سے حملے کے واقعے میں ملوث تھے۔

یہ واقعہ 10 ستمبر 2016 کو برطانیہ کے علاقے واش وڈ ہیتھ میں پیش آیا تھا جس میں ذاکر نواز ہلاک ہوگئے تھے۔

قتل کی اس واردات کے فوراً بعد یورپیئن اریسٹ وارنٹ جاری کر دیے گئے تھے۔ عبداللہی شائر کو اس مہینے کے شروع میں ناروے کی پولیس نے حراست میں لیا تھا۔

منگل کو ویسٹ مڈلینڈز پولیس ملزم کو ناروے سے واپس برطانیہ لے آئی تھی۔

24 برس کے ملزم عبداللہی شائر کو جمعرات کو برمنگھم کی ایک عدالت میں پیش کیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیے

مقدمہ خارج: ’پولیس نے کہا وہ ریپ تو نہیں، بس پرتشدد سیکس تھا‘

برطانوی پولیس افسر کا قتل، پاکستان میں ایک شخص گرفتار

’بہنوں کی موت کی خبر پر یقین کرنے سے انکار کر دیا‘

ملزم کا تعلق ہالینڈ سے ہے اور برطانیہ میں کوئی مستقل پتا نہیں ہے۔

اس واردات کے سلسلے میں دو افراد کو پہلے ہی سزا سنائی جا چکی ہے۔

ذاکر نواز اور ان پر حملہ کرنے والے افراد کے درمیان گاڑی کا ایک معمولی سا حادثہ ہوا تھا۔ اس کے بعد ملزمان نے ان پر حملہ کر دیا جس کے نتیجے میں وہ موقع پر ہی ہلاک ہو گئے تھے۔ ان کی موت سے صرف 10 روز پہلے ہی ان کے دوسرے بچے کی ولادت ہوئی تھی۔

واقع میں ملوث 24 سالہ محمد نے غیر ارادی قتل اور پرتشدد طریقے سے امن و امان میں خلل ڈالنے کا اعتراف کیا تھا اور سنہ 2019 میں اسے ساڑھے چار سال قید کی سزا دی گئی تھی۔ بعد میں اپیل کے نتیجے میں مجرم کی سزا بڑھا کر سات سال کر دی گئی تھی۔

جبکہ سنہ 2017 میں ایک دوسرے شخص کو پر تشدد طریقے سے امن و امان خراب کرنے کے اعتراف کے بعد دو سال قید کی سزا سنائی گئی تھی۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

بی بی سی

بی بی سی اور 'ہم سب' کے درمیان باہمی اشتراک کے معاہدے کے تحت بی بی سی کے مضامین 'ہم سب' پر شائع کیے جاتے ہیں۔

british-broadcasting-corp has 14652 posts and counting.See all posts by british-broadcasting-corp