‘شادی کا سفید جوڑا پہننا تھا مگر سفید تابوت میں دفنایا’

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

سحر فارس آگ بھجانے والے عملے کے ساتھ کام کرنے والے طبی عملے کا حصہ تھیں۔ وہ بیروت میں آگ لگنے کے واقعے پر جائے حادثہ پر زندگیاں بچانے اور فوری امداد فراہم کرنے کے لیے گئی تھیں۔ مگر وہاں ہونے والے دھماکے میں اپنی جان کھو بیٹھیں۔ بیروت میں اس ہولناک حادثے کے بعد سحر کی ہلاکت کی خبر اور اُن کی تصاویر کثرت سے سوشل میڈیا پر شیئر کی گئی۔

سحر کی کہانی نے بیروت ہی نہیں بلکہ باقی دنیا میں بھی لوگوں کے دل توڑ دیے ہیں۔ سحر صرف 27 برس کی تھیں، اُن کی منگنی ہوچکی تھی اور عنقریب شادی ہونی تھی۔

سحر کے منگیتر گلبرٹ کرآن نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے اس حادثے کے بارے میں بات کرتے ہوئے بتایا کہ ‘وہ وہاں پہنچی اور اُس نے مجھے وہاں سے وڈیو بھیجی۔’

https://twitter.com/sommervilletv/status/1292583994194833409?s=20

بی بی سی کے نامہ نگار کوئنٹن سمروال نے یہ وڈیو شیئر کرتے ہوئے بتایا کہ سحر نے جب اپنے منگیتر کو یہ وڈیو بھیجی تو اُنہوں نے گوگل میپس پر دیکھ کر جگہ کا تعین کیا اور سحر کے نگران کو فون کر کہا کہ وہ انہیں وہاں سے نکلنے کا کہیں۔ یہ وڈیو سحر کی زندگی میں اُن کی جانب سے لی گئی آخری وڈیو تھی۔

گلبرٹ کرآن

BBC
سحر فارس کے منگیتر گلبرٹ کرآن نے بی بی سی کو اپنی منگیتر کے ساتھ آخری وڈیو کال کی تفصیلات بتائیں

سحر کے منگیتر گلبرٹ نے اس وڈیو کے بارے میں بی بی سی کو بتایا کہ ‘میں نے اُسے وڈیو کال کی تاکہ دیکھوں کہ وہاں کیا ہو رہا ہے۔ میں نے اُس سے کہا کہ اگر وہاں کچھ ہو رہا ہے تو بھاگو۔ اُس نے میری طرف دیکھا۔ میں نے اُس سے ایک بار پھر کہا کہ اگر کچھ گڑبڑ ہے تو بھاگو۔ اُس نے بھاگنا شروع کیا۔ وہ بھاگ رہی تھی اور میں چیخ رہا تھا کہ بھاگو، بھاگو، بھاگو!۔’

اس دردناک کال کے بارے میں مزید بات کرتے ہوئے گلبرٹ کرآن نے بتایا کہ ‘مجھے صحیح دورانیہ یاد نہیں لیکن 9 یا 10 سیکنڈ کے بعد پہلا دھماکہ ہوا اور فون بند ہوگیا۔’

گلبرٹ کرآن

BBC
گلبرٹ کرآن نے منگنی کی انگوٹھی اب اپنے گلے کی ایک چین میں ڈال کر پہن لی ہے۔

سحر اپنی شادی کی تیاریاں کر رہی تھیں اُن کی منگنی کی انگوٹھی اُن کی لاش سے ملی۔ اُن کے منگیتر گلبرٹ کرآن اس انگوٹھی کو اپنے گلے میں ایک چین میں پہنتے ہیں۔

https://twitter.com/sommervilletv/status/1292580968348426240?s=20

بی بی سی کے نامہ نگار کوئنٹن سمرول نے سحر فارس اور اُن کے منگیتر کی خوشیاں مناتے ہوئے وڈیو شیئر کی۔

گلبرٹ کہتے ہیں کہ ‘اُس کے ساتھ شادی کرنی تھی جس میں انہوں نے سفید جوڑا پہننا تھا۔مگر میں نے اُسے سفید تابوت میں دفنایا’

https://twitter.com/Em__Jay/status/[email protected]

ماری جو نے سحر کی کے جنازے کی تصویر شیئر کرتے ہوئے لکھا کہ ‘اُن کے گھر والے اُن پر ایسے پھول کی پتیاں پھینک رہے ہیں جیسے اُن کی شادی کے دوران کرتے۔ یہ واقعی بہت المناک ہے۔’

مستقبل کے بارے میں بات کرتے ہوئے گلبرٹ کہتے ہیں کہ ‘اسے کی جگہ کون لے سکتا ہے؟’ اُن کا مزید کہنا تھا کہ ‘میرا دل و دماغ سُن ہوگیا ہے کچھ محسوس نہیں ہورہا۔’

اپنی منگیتر سحر فارس کو یاد کرتے ہوئے وہ کہتے ہیں کہ ‘آپ یہ کیسے دیکھ سکتے ہیں کہ وہ گلاب جیسی لڑکی جو سو مردوں جتنی مضبوط تھی، وہ کیسے یوں ہلاک ہوسکتی ہے؟ میں چاہتا ہوں کے کوئی مجھے یہ سمجھائے۔’

لبنان کے دارالحکومت بیروت میں چار اگست کو ہونے والے دھماکے کے بعد سے حکومت کی نا اہلی پر عوام کے غیض و غضب میں مسلسل اضافے کے بعد گزشتہ روز لبنان میں حکومت نے مستعفی ہونے کا اعلان کیا تھا۔

گذشتہ منگل کو ہونے والے دھماکے میں چار ہزار سے زیادہ افراد زخمی اور دو سو سے زیادہ ہلاک ہوئے تھے۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

بی بی سی

بی بی سی اور 'ہم سب' کے درمیان باہمی اشتراک کے معاہدے کے تحت بی بی سی کے مضامین 'ہم سب' پر شائع کیے جاتے ہیں۔

british-broadcasting-corp has 15412 posts and counting.See all posts by british-broadcasting-corp