تیل تنصیبات پر حملہ: سعودی وزارت توانائی کا جیزان میں تیل کی تنصیبات پر حملہ ناکام بنانے کا دعویٰ

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

سعودی تیل
Getty Images
سعودی عرب کی جانب سے دعویٰ کیا گیا ہے کہ انھوں نے یمن کے حوثی باغیوں کی جانب سے جیزان صوبے میں سعودی تیل کی تنصیبات پر کیے جانے والے حملے کو ناکام بنا دیا ہے جس میں بغیر پائلٹ والی کشتیوں کا استعمال ہوا تھا۔

سعودی عرب کی سرکاری خبر رساں ایجنسی سعودی پریس ایجنسی کے مطابق جمعرات کو رات گئے سعودی وزارت توانائی کی جانب سے جاری ایک اعلامیہ میں کہا گیا کہ سعودی دفاعی حکام نے ’دھماکہ خیز مواد سے لدی دو کشتیوں کو تباہ کر دیا جو حوثی باغیوں نے تیل کی تنصیبات پر حملہ کرنے کے لیے بھیجی تھیں۔‘

ایس پی اے کے مطابق حملہ بدھ کی شب ہوا تھا اور اس کی وجہ سے تیل کی تنصیبات پر آگ لگ گئی تھی لیکن اس پر بعد میں قابو پا لیا گیا اور کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔

یہ بھی پڑھیے

امریکہ سعودی عرب میں ہزاروں اضافی فوجی تعینات کرے گا

’سعودی عرب تیل تنصیبات پر حملے کا مناسب جواب دے گا‘

ایران نے امریکی الزام ’دھوکے بازی‘ قرار دے دیا

نقشہ جیزان

BBC

سعودی عرب کی جانب سے کہا گیا کہ سعودی توانائی کی اہم تنصیبات پر ایسا حملہ نہ صرف سعودی عرب پر حملہ ہے بلکہ ’دنیا کی توانائی کی فراہمی، آزاد تجارت اور عالمی معیشت کے استحکام کو بھی خطرہ ہے۔‘

سعودی عرب سے یمن پر پانچ برس قبل کیے گئے حملے کے بعد سے حوثی باغیوں اور ان کے اتحادیوں نے بارہا جواب میں سعودی تیل کی تنصیبات، فوجی اہداف اور ہوائی اڈوں پر میزائلوں اور ڈرونوں سے حملہ کرنے کی کوشش کی ہے۔

یاد رہے کہ گزشتہ موسم گرما میں شمالی سعودی عرب میں تیل کی سب سے بڑی کمپنی آرامکو کی تیل تنصیبات پر ایک غیر متوقع اور شدید حملہ کیا گیا تھا جس کی ذمہ داری حوثی ملیشیا نے قبول کی تھی، تاہم سعودی عرب کا کہنا تھا کہ اس حملے میں ایران کا کردار ناقابل تردید ہے۔

تیل تنصیبات حملہ

Reuters

حوثی عسکریت پسندوں اور ان کے اتحادیوں کے ساتھ سعودی عرب کی زیر قیادت اتحاد کے پانچ سالہ تنازع میں اندازً دس ہزار یمنی شہریوں کی ہلاکت ہوئی ہے جن میں سے زیادہ تر سعودی اتحادیوں کے حملوں کا نشانہ بنے تھے۔

اس کے علاوہ قحط اور بیماریوں کے پھیلنے سے بھی ہزاروں افراد اپنی زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

بی بی سی

بی بی سی اور 'ہم سب' کے درمیان باہمی اشتراک کے معاہدے کے تحت بی بی سی کے مضامین 'ہم سب' پر شائع کیے جاتے ہیں۔

british-broadcasting-corp has 16635 posts and counting.See all posts by british-broadcasting-corp