انوشکا شرما کی دوران حمل یوگا کرتی تصویر پر صارفین کا ردعمل: ’یہ غلط ہے اس سے بچے کو نقصان پہنچ سکتا ہے‘

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

یوگا ایک سکون آور جمسانی ورزش ہے اور دنیا بھر میں خود کو فٹ رہنے کا یہ طریقہ خاصا مقبول ہے لیکن چند دن پہلے بالی وڈ سٹار انوشکا شرما نے جب اپنے انسٹاگرام پر اپنی یوگا کرتی ایک تصویر کو شیئر کیا تو انھیں سخت تنقید کا سامنا کرنا پڑا اور اس تنقید کی ایک وجہ شاید انوشکا کا حاملہ ہونے کے باوجود یوگا کرنا تھا۔

سوشل میڈیا صارفین نے دوران حمل اتنی مشکل ورزش کرنے پر نہ صرف سوال اٹھائے بلکہ انوشکا کو نت نئے مشورے بھی سُننا پڑے۔ شیئر ہونے والی تصویر میں دیکھا جا سکتا ہے کہ انوشکا سر کے بل الٹی دیوار کے ساتھ لگی ہیں جبکہ ورات کوہلی ان کی ٹانگوں کو سہارا دیے ہوئے ہیں۔

واضح رہے کہ انوشکا شرما اور ان کے شوہر ورات کوہلی کے ہاں جنوری میں پہلے بچے کی پیدائش متوقع ہے اور اس وجہ سے بھی یہ جوڑا آج کل شہ سرخیوں میں ہے۔

ایک صارف نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے لکھا کہ ’میرے خیال سے یہ غلط ہے اس سے بچے کو نقصان پہنچ سکتا ہے۔‘

صہیب ابراہیم نامی صارف نے لکھا: ’حمل کے دوران یہ ورزش ٹھیک نہیں۔ یہ دوسروں کے لیے متاثر کن نہیں۔ پلیز اپنے حمل کے دوران ایسی ورزش نہ کریں۔‘

یہ بھی پڑھیے

’انوشکا اور کوہلی کی خوشخبری، اب تیمور کا کیا ہو گا‘

’حمل کے دوران سنی سنائی باتوں پر ہرگز نہ جائیں‘

حاملہ خواتین کو کروٹ سونے کا مشورہ کیوں؟

ایک اور صارف نے لکھا: ’یہ بے وقوفی ہے۔ امید ہے کہ کوئی بھی اس سیلیبرٹی ٹرینڈ کی پیروی نہیں کرے گا۔‘

ایک ٹوئٹر صارف نے انوشکا کی یوگا کرتی تصویر پر حیرت کا اظہار کرتے ہوئے لکھا کہ اس کے لیے بہت زیادہ طاقت کی ضرورت ہوتی ہے۔

https://twitter.com/CricketGirl_45/status/1333718704983400450

انھوں نے لکھا: ’مجھے نہیں معلوم کہ یہ حاملہ خواتین کے لیے محفوظ ہے یا نہیں؟ میرے خیال میں اس میں خطرہ ہے۔‘

انسٹا گرام پر انوشکا کی اس تصویر کے نیچے ایک صارف نے انوشکا کو مخاطب کرتے ہوئے لکھا کہ ’اس کی کیا ضرورت تھی؟ شاید آپ ایسا کر سکتی ہیں لیکن اس کو پوسٹ کرنے کی منطق کیا ہے۔ آپ کے بہت سے فالوورز کے پاس آپ جیسی ٹیم نہیں ہو گی اور وہ آپ کی اندھی پیروی میں اپنا نقصان کر بیٹھیں گے۔‘

ارم خان نامی صارف نے لکھا کہ ’باپ رے ایسی کوئی چیز پہلے نہیں دیکھی‘ جبکہ پلوی پرکھاش نے لکھا: ’یہ ڈراؤنا ہے پلیز اس وقت کے دوران ایسا نہ کریں۔‘

حمل کے دوران خواتین کو خوراک اور ورزش کے متعلق کئی مفت مشورے سننے کو ملتے ہیں، جن میں سے اکثر غلط فہمی پر مبنی ہوتے ہیں۔

اسی بارے میں ہماری ساتھی نازش ظفر نے اپنی ایک تحریر میں حاملہ خواتین کو ملنے والے مشوروں کی حقیقت جاننے کے لیے ماہرین کی مدد لی۔

بی بی سی نے اسلام آباد میں واقع خواتین کے لیے مخصوص ایک ایسے جم کا دورہ کیا تھا جہاں حاملہ خواتین کے لیے یوگا کی خصوصی کلاس منعقد کی جاتی ہے۔

اس بارے میں کہ آیا ورزش کرنے سے حمل گرنے کا خطرہ بڑھ جاتا ہے کے بارے میں ماہرین کی رائے یہی ہے کہ اسقاط حمل کسی مخصوص حالت میں ہی ہوتا ہے اور پہلی سہہ ماہی میں ورزش نہ ہی کریں تو بہتر ہے۔ اس پر آپ کے معالج کا مشورہ ہی درست مانا جائے گا۔

ماہرین کا یہ بھی کہنا ہے کہ اگر آپ نے پہلے کبھی ورزش نہیں کی تو حمل کے دوران بھی نہ شروع کریں۔

ماہرین کے مطابق حمل کے دوران پیٹ کی سخت ورزش نہ کریں لیکن جسم کو حرکت میں رکھنا ضروری ہے، اس کے لیے سٹریچ اور چہل قدمی ضرور کریں۔ اسی بارے میں مزید جاننے کے لیے ہماری یہ ڈیجیٹل ویڈیو دیکھیے جسے پہلی بار 16 مارچ 2019 کو شائع کیا گیا تھا۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

بی بی سی

بی بی سی اور 'ہم سب' کے درمیان باہمی اشتراک کے معاہدے کے تحت بی بی سی کے مضامین 'ہم سب' پر شائع کیے جاتے ہیں۔

british-broadcasting-corp has 17287 posts and counting.See all posts by british-broadcasting-corp