اٹلی: ہسپتال کے ملازم پر 15 سال کام پر آئے بغیر پوری تنخواہ لینے کا الزام

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  


اٹلی

Getty Images

اٹلی میں ایک ہسپتال کے ملازم پر 15 سال کام پر آئے بغیر پوری تنخواہ لینے کا الزام عائد کیا گیا ہے۔

اٹلی کے مقامی میڈیا کے مطابق کتانزرو شہر کے سیاکیو ہسپتال میں اس شخص نے سنہ 2005 میں مبینہ طور پر کام پر آنا چھوڑ دیا تھا۔

اطالوی خبر رساں ادارے انسا کے مطابق اب اس شخص کے خلاف دھوکہ دہی، بھتہ خوری اور دفتر کے ناجائز استعمال کے الزامات میں تفتیش کی جا رہی ہے۔

مبینہ طور پر اس شخص کو ان برسوں میں تنخواہ کی مد میں 5 لاکھ 38 ہزار یورو کی ادائیگی کی گئی۔ ان کی مبینہ غیر حاضری کے سلسلے میں ہسپتال کے چھ منیجرز سے بھی تفتیش کی جارہی ہے۔

یہ بھی پڑھیے

انڈیا: ’ایک ساتھ 25 سرکاری سکولوں سے تنخواہ لینے والی‘ استانی گرفتار

ایک ہزار روپیہ ماہوار تنخواہ پانے والے نابینا ڈاکیا

نہ چھٹی، نہ تنخواہ، اور دنیا کی سب سے مشکل نوکری

یہ گرفتاریاں اطالوی پبلک سیکٹر میں غیر حاضریوں اور مشتبہ دھوکہ دہی کے بارے میں پولیس کی طویل تحقیقات کا نتیجہ ہیں۔

پولیس نے بتایا ہے کہ مذکورہ شخض ایک سرکاری ملازم تھا اور اسے سنہ 2005 میں ہسپتال میں ملازمت دی گئی اور اسی وقت سے اس نے کام پر جانا چھوڑ دیا تھا۔

پولیس نے یہ الزام بھی لگایا ہے کہ یہ شخص اپنے مینیجر کو دھمکی دیتا تھا جس کی وجہ سے مینیجر نے اس کے خلاف تادیبی رپورٹ درج نہیں کرائی۔

پولیس نے مزید بتایا کہ بعد میں وہ مینیجر تو ریٹائر ہو گیا لیکن ان کے بعد آنے والے مینیجر یا ایچ آر (ہیومن ریسورس)ڈیپارٹمنٹ نے کبھی ان کی غیر حاضری کو نوٹس نہیں کیا۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

بی بی سی

بی بی سی اور 'ہم سب' کے درمیان باہمی اشتراک کے معاہدے کے تحت بی بی سی کے مضامین 'ہم سب' پر شائع کیے جاتے ہیں۔

british-broadcasting-corp has 18858 posts and counting.See all posts by british-broadcasting-corp