اپنی مٹی کی مسجد

میرا دوست لوگن تبت کا رہنے والا ہے اور بدھ مت کا پیروکار ہے۔ میرے قریب ہی اس کا دفتر ہے۔ آتے جاتے دفتر آ جاتا ہے۔ ہمیشہ بہت پیار سے اسلام علیکم کہ کرآ جاتا ہے۔ آج مجھ سے رمضان کے بارے میں پوچھ رہا تھا۔ روزے کے اصل مقصد پر گفتگو ہوئی۔ پھراچانک اپنی کہانی سنانے لگا۔ جب چینیوں کے مظالم بڑھ گے تو ہم تبت سے انڈیا ہجرت کر گئے۔ اتر پردیش میں جوکہ اب دو صوبوں میں بٹ گیا ہے۔ہمارا مہاجر کیمپ بنا۔ میں نے کینیڈا آنے سے پہلے جوانی اس کیمپ میں گزاری۔ کیمپ کے بالکل قریب ایک خوبصورت گاؤں تھا۔ جہاں ہم آتے جاتے تھے۔ وہاں آدھ مسلمان اور آدھے ہندو بڑے سکوں سے رہ رہے تھے۔ مندر اور مسجد دونوں تھے۔ مگر کبھی کوی جھگڑا نہیں تھا۔

Read more

اللہ کا تصور اور بچے

میری دس سالہ بیٹی نے آہستہ سے پوچھا! پاپا کیا اللہ چھوٹے چھوٹے گناہوں پر بھی لوگوں کو جہنم میں ڈالیں گے؟ میں نے کہا ہنیہ بچے۔ کبھی آپ کی ماں نے آپ کو چھوٹی چھوٹی غلطیوں پر سزا دی ہے۔ ہنیہ نے ذرا سوچ کر نفی میں سر ہلایا۔ تو بچے پھر اللہ تو ماں سے بھی 70 گنا زیادہ آپ سے محبت کرتا ہے وہ کیسے اتنی آسانی سے آپ کو سزا دینا پسند کرے گا۔ وہ مسکرا کر مطمئن سی ہو گئی۔

Read more