کس بیدردی سے اخبارات اردو کو مسخ کر رہے ہیں؟

اردو ادب اور صحافت کا اوائل ہی سے ایک دوسرے کے ساتھ بڑا گہرا رشتہ رہا ہے اور بلاشبہ اردو زبان کی ترقی اور فروغ میں اردو اخبارات کا بڑا اہم کردار رہا ہے۔ اسی زمانہ میں جب کہ اردو زبان کم سنی کے عہد سے نکل کر بلوغت کی شعوری منزلوں کو چھو رہی…

Read more

بر صغیر کی تباہی کا ایک اہم سبب: موروثی حکمرانی

1991 میں بے نظیر بھٹو اقتدار سے محروم تھیں۔ تب انہوں نے برصغیر کے حزب مخالف کے رہنماوں کی اسلام آباد میں ایک کانفرنس بلائی تھی جس میں ہندوستان کے وی پی سنگھ، بنگلہ دیش کی حسینہ واجد اور سری لنکا کی صدر چندریکا کمارتنگا کے حریف بھائی انورا بندارنایکے شریک ہوئے تھے۔ بے نظیر…

Read more

مسلم لیگ کے 112 سال – نامرادیوں سے عبارت

آل انڈیا مسلم لیگ پر اس کے نکتہ چینوں کی یہ نکتہ چینی بجا نظر آتی ہے کہ بنیادی طور پر یہ جماعت بر صغیر کے نوابین، تعلقہ داروں، جاگیر داروں، وڈیروں۔ خوانین، قبائیلی سرداروں اور ابھرتے ہوئے مسلم صنعت کاروں اور تاجروں کی جماعت تھی جو ٹاٹا، برلا اور ڈالمیا ایسے بڑے بڑے صنعت کاروں کا مقابلہ کرنے میں بے بس نظر آتے تھے، اور حقیقت یہ ہے کہ مسلم لیگ کی قیادت نے قیام پاکستان کے لئے ان ہی عناصر کی مدد اور اعانت حاصل کی کیونکہ انہیں صرف ایک علاحدہ مملکت ہی میں اپنے مفادات کے تحفظ اور فروغ کے امکانات نظر آتے تھے۔

Read more

گوادر کی حریف بندرگاہ چا بہار: ہندوستان کی تحویل میں

پیر 24 دسمبر کو ایران کی بندرگاہ چا بہار کا انتظام ہندوستان نے سنبھال لیا ہے۔ جنوبی ایران میں یہ بندرگاہ، صرف 80 کلومیٹر کے فاصلہ پر واقع پاکستان کی بندرگاہ گوادر کی حریف بندرگاہ بن کر ابھری ہے۔ اگرچہ کہا یہ جاتا پے کہ چابہار بندرگاہ کا مقصد جنگ زدہ افغانستان کی معیشت کو…

Read more

قائد اعظم کس نوع کی مملکت قائم کرنا چاہتے تھے؟

یہ محض ایک مفروضہ ہے جو قیام پاکستان کے کافی عرصہ کے بعد سامنے آیا تھا کہ تحریک پاکستان کا یہ نعرہ تھا کہ ”پاکستان کا مطلب کیا لا الہ الا اللہ“۔ جو لوگ تحریک پاکستان کے دور سے مانوس ہیں انہوں نے کبھی یہ نعرہ نہیں سنا اورنہ کہیں پڑھا تھا۔ ویسے بھی آج…

Read more

خاکستر بابری مسجد: ہندوستان کے ضمیر پر بھاری پتھر

26  سال پہلے 6 دسمبر کو ایودھیا میں بھارتیا جنتا پارٹی اور اس کے پریوار کی تنظیموں کے جنونیوں نے بابر کے دور کی چار سو ترانوے سال قدیم بابری مسجد کو مسمار کر کے ہندوستان کے سیکولر آئین کے سینہ میں جو گھاؤ لگایا تھا، وہ گذشتہ چوتھائی صدی میں بڑھ کر ناسور بن…

Read more

کرتار پور راہ داری یا خلفشار کی راہ داری

  ہندوستان کی سرحد پر ڈیرہ بابا نانک صاحب سے پاکستان میں گرودوارہ صاحب کرتار پور تک تین میل لمبی راہ داری کے منصوبہ نے ہندوستان اور پاکستان کے درمیان تعلقات میں بہتری اور دونوں ملکوں کے درمیان با مقصد مذاکرات کی تجدید کی توقعات کو تقویت پہنچانے کے بجائے خلفشار کی راہداری کھول دی…

Read more

سکونِ قلب کے متلاشی ۔ مترجم  و مفسر قران عبداللہ یوسف علی

ایک اکیاسی سالہ، لاغر، مخبوط الحواس، مفلس شخص، جو کئی سال سے وسطی لندن کی سڑکوں پر بے مقصد گھومتا پھرتا نظر آتا تھا، 1953 کے دسمبر میں جب کہ کڑاکے کی سردی پڑ رہی تھی، ویسٹ منسٹر میں ایک عمارت کے دروازے کی سیڑھیوں پر، کس مپرسی کے عالم میں پڑا ہوا تھا۔ پولس…

Read more

بابری مسجد کے بعد دو تاریخی مساجد ہندوتوا کے نشانہ پر

26 سال قبل فیض آباد میں، جس کا نام بدل کر اب ایودھیا رکھ دیا گیا ہے، نہایت جنونی انداز سے بھارتیا جنتا پارٹی، وشو اہند و پریشد اور بجرنگ دل کے کار سیوکوں نے چار سو نوے سال پرانی بابری مسجد مسمار کی تھی۔ جواز یہ پیش کیا گیا تھا کہ یہ مسجد، رام…

Read more

عجلت کے فیصلے جنہوں نے ہمیں راندہ زمانہ کیا۔

امریکا کے صدر ٹرمپ نے پچھلے دنوں فاکس نیوز پر ایک انٹرویو میں پاکستان کی امداد بند کرنے کے فیصلے کا دفاع کرتے ہوئے شکایت کی کہ امریکا پاکستان کو ہر سال ایک ارب تیس کrوڑ ڈالر کی امداد دیتا رہا ہے لیکن پاکستان نے اس کے عوض کچھ نہیں دیا۔ اس کے جواب میں…

Read more