طلبہ یونین پر غصہ کیوں؟

انیس سو نواسی میں یعنی آج سے تیس سال پہلے پاکستان کے کالجوں اور یونیورسٹیوں میں یونین کے انتخابات ہوئے تھے۔ یہ وہ دور تھا جب محترمہ بے نظیر بھٹو نے ابھی اقتدار سنبھالا ہی تھا اور انہوں نے ہی طلبہ یونین پر جنرل ضیاء الحق کی لگائی ہوئی پابندی کا خاتمہ کیا تھا۔ کالجوں…

Read more

حکومت کو گھر جانا ہو تو راستہ نکل ہی آتا ہے

محترمہ بے نظیر بھٹو کا پہلا دور حکومت ختم ہونے کو تھا جب میں نے پہلی بار ملک سے باہر قدم رکھا اور عمرہ کیا۔ یہ وہ زمانہ تھا جب پاکستانی زائرین کی اتنی بڑی تعداد مکہ میں نظر نہیں آتی تھی جتنی آج دکھائی دیتی ہے۔ میں عمرہ مکمل کر چکا تھا اور آدھی…

Read more

کپتان تم نے ریاستِ مدینہ، بنانی ہی نہیں تھی

ناروے میں مقیم ایک پی ایچ ڈی پاکستانی خاتون کو یکا یک احساس ہوا کہ اسے اپنے چار بچوں کو اسلام اور اسلامی اقدار سے روشناس کرانے کے لیے پاکستان منتقل ہو جانا چاہیے۔ ان کے شوہر نے اس خواہش کے عملی پہلوؤں پر روشنی ڈالی تو بات کچھ دب گئی لیکن خاتون کو یہ…

Read more

ایسی حکومت کو اس کے دوست ہی گھر بھیجتے ہیں

گزشتہ پندرہ مہینوں میں یہ بات تو پایہ ثبوت تک پہنچ چکی ہے کہ پہیے کی ایجاد، لباس کا استعمال اور چقماق پتھر سے آگ لگانے کے طریقے کی دریافت تحریک انصاف کے ہی کارنامے ہیں۔ بائیس کروڑ عوام میں سے کون ایسی ہمت کر سکتا ہے کہ وہ دیانت داری، صداقت شعاری اور انصاف…

Read more

بائیس کروڑ لوگوں کا وزیراعظم ، خود کو کپتان سمجھتا ہے

جناب عمران خان وزیر اعظم بن کر ملک تو چلا نہ پائیں مگر اپنے مخالفین کے خلاف نفرت انگیز تقریریں کریں، معیشت کو ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ اور رضا باقر جیسوں کے حوالے کرکے مطمئن ہو جائیں، میڈیا کو اپنا دشمن سمجھنے لگیں، کان میں پڑنے والی ہر یاوہ گوئی کو خبر مانیں، اپنی دیانتداری کے…

Read more

من کہ ایک مقتول

میرا نام نقیب اللہ محسود ہے۔ اگر آپ بھول نہیں گئے تو میں ایک مقتول ہوں۔ میری زندگی میں بس ایک خواہش تھی کہ میں خوبصورت لگوں اور خدا لگتی بات ہے میں خوبصورت ہوں بھی۔ یقین نہ آئے تو میرا نام گوگل میں ڈال کر دیکھیے آپ کو میری تصویریں مل جائیں گی، پھر…

Read more

کپتان ، نفرت نے کامیاب کیا وہی ناکام کرے گی

چند دن پہلے قومی اسمبلی کے سپیکر اسد قیصر نے شہباز شریف کو فون کیا اور کہا، ''اس وقت میرے ساتھ پرویز خٹک بیٹھے ہیں۔ میں ان کی موجودگی میں آپ سے درخواست کرنا چاہتا ہوں کہ مولانا فضل الرحمن کے آزادی مارچ میں حصہ لینے سے پہلے آپ حکومت کی قائم کردہ مذاکراتی کمیٹی…

Read more

عمران خان اب کشتی کا بوجھ ہیں

عربی کہاوت ہے ، ''اکثر باتیں کہنے والے کو کہتی ہیں ، ہمیں مت کہو‘‘۔ مطلب یہ کہ جو بات غیر ضروری طور پر کی جائے وہ اپنے گلے آجاتی ہے۔ اس کہاوت سے جڑی حکایت ہے کہ کوئی بادشاہ ایک ٹیلے پر اپنے غلام اور وزیر کے ساتھ کھڑا تھا۔ غلام مسلسل ٹیلے کی…

Read more

دھرنا، حکومت کے ہاتھ سے وقت نکل رہا ہے

مولانا فضل الرحمن دو ہزار اٹھارہ کے الیکشن کے خلاف دھرنے کا اعلان کر کے وہی تو کر رہے ہیں جو دو ہزار تیرہ کے الیکشن میں دھاندلی کے خلاف تحریک انصاف نے جناب عمران خان کی قیادت میں کیا تھا۔ اس وقت عمران خان شاہراہ دستور پر بیٹھ کر نواز شریف سے استعفیٰ طلب…

Read more

پولیس نظام اس دور میں ٹھیک ہو سکے گا ؟

پولیس میں اصلاحات عمران خان کی انتخابی مہم کا اہم ترین نعرہ تھا۔ خیبر پختونخوا میں اپنے پہلے پانچ سالوں میں انہوں نے تھوڑا بہت کام اس حوالے سے کیا بھی لیکن وزیر اعظم بننے کے بعد اب تک پولیس اصلاحات ان کے نزدیک وہ اہمیت حاصل نہیں کر سکیں جتنی الیکشن مہم کے دوران…

Read more