آغا شورش کاشمیری کی شعلہ بیانی کے چند شاہکار

آغا شورش کاشمیری کے بہت سے تعارف ہو سکتے ہیں۔ وہ بیک وقت ایک اسکالر، لکھاری اور سیاستدان تھے۔ مذہب کے حوالے سے کافی متحرک ہونے کے ساتھ ساتھ معروف ہفتہ وار میگزین چٹان کے مدیر بھی تھے۔ ان کا ایک تعارف شعلہ بیان مقرر کا بھی ہے اور بلا شبہ ان کی چار چار گھنٹے کی تقریروں میں مجمعے کو سانپ سونگھ جاتا۔ اپنی شعلہ آفاق تقریروں کی بدولت کئی بار جیل یاترا نصیب ہوئی۔ تاہم زبان و بیان کے حوالے سے ان کی تقاریر میں کچھ چیزیں کمال کی ہوتی تھیں۔

Read more

سوار اور سواری

جن مسلم گھروں میں تین چار سال کے بچے اور با قاعدگی یابے قاعدگی سے نماز اداکرنے والے والدین ہوں وہاں بچوں کے ایک کھیل کی روایت شاید آفاقی ہے۔ کھیل بھی کیا ہے کہ لہو گرم رکھنے کا اک بہانہ ہے۔ ادھر آپ سجدے میں گئے نہیں اور ادھر وہی بچہ جوابھی بظاہر آپ…

Read more

کرونا کے دنوں میں ایک استانی کا والدین کے نام خط

محترم والدین! السلام و علیکم امید ہے آپ لاک ڈاؤن کے دوران اپنے گھر میں با لکل خیرو عافیت سے ہوں گے ۔ ہم بھی ٹھیک ہی ہیں۔ دیکھیں با ت یہ کہ ہر سال یہی ہوتا ہے کہ آپ سب اپنے بچے کی گرمیوں کی چھٹیوں کی فیس جمع کرواتے ہیں اور صرف ایک…

Read more

نظر بد – اسلامی ممالک میں موجود عقائد

ڈاکٹر علی علومی، نے یونیورسٹی آف کیلی فورنیا، امریکا سے پی ایچ ڈی مکمل کی اور اب پین سلوانیہ اسٹیٹ یونیورسٹی میں اسسٹنٹ پروفیسر ہیں اور تاریخ پڑھاتے ہیں۔ ان کی دلچسپی کے موضوعا ت میں اسلامی تاریخ، مشرق وسطیٰ کی جدید تاریخ، مذہب کی تاریخ وغیرہ شامل ہیں۔ ڈاکٹر علی ایپل پوڈکاسٹ پر ”ہیڈ…

Read more

تین جانور، تین کہانیاں

ایک دم اور چار ٹانگوں کے علاوہ ان تینوں جانوروں میں جو قدر مشترک ہے وہ ان کی وفاداری اور محبت کے انمول سبق ہیں۔ ایک ایسے دور میں جب یہ چیزیں انسانوں میں۔ چلیں رہنے دیں، کہانیاں پڑھیں۔ شہزادہ سلیم یعنی جہانگیر بادشاہ عرف شیخو سے تو ہم سب بخوبی آگاہ ہیں۔ ایک کہانی…

Read more

ترک ڈرامہ ارطغرل : نسیم حجازی سے فاطمہ بھٹو تک

غالب امکان ہے کہ نیٹ فلکس اور یو ٹیوب کے اس دور میں ابھی بھی بہت سے ایسے لوگ موجود ہوں گے جن کے حافظے میں پی ٹی وی کے اور بہت سے شاہکار ڈراموں کی طرح سقوط بغداد کے پس منظر میں نسیم حجازی کا لکھا ہوا ”آخری چٹان“ محفوظ ہوگا۔ یہ وہ زمانہ…

Read more

باقر خانی: ایک پیار بھری کہانی

باقر خانی مغلئی دور کی ایک ایسی یادگار ہے جو مشرقی بنگال کے شہر ڈھاکہ میں پہلی دفعہ متعارف ہوئی اور رفتہ رفتہ پورے خطے میں مقبول ہو گئی۔ تاہم وہ شے جسے اس خطے کے طول و ارض میں پھیلے کروڑوں لوگ بلا تفریق رنگ و نسل نہایت ذوق و شوق سے کھاتے ہیں…

Read more

تین بہنیں، تین کہانیاں

قصۂ چہار درویش کی طرح معروف نہ سہی لیکن تین بہنوں کی کہانی، انسانی سماج کی تین مختلف جہتوں ادب، معاشیات اور سیاحت سے جڑی ہوئی ہیں۔ یہ تین جدا اور ایک دوسرے سے بالکل لا تعلق سی کہانیاں ہیں جن میں ایک کے سوا شاید کوئی بھی کہانیوں کے ادبی معیار پر پوری نہیں…

Read more

عشرت فاطمہ سے چند سوالات

عشرت فاطمہ جو بعد میں عشرت ثاقب بنیں، پاکستان میں ٹی وی کے اس دور سے تعلق رکھتی ہیں جب صرف اور صرف پی ٹی وی کا راج ہوا کرتا تھا۔ رات نو بجے کا خبرنامہ ملک کے طول و ارض میں نہایت سنجیدگی کے ساتھ سنا اور دیکھا جاتا تھا۔ عشرت فاطمہ کا سادگی…

Read more

کرونا اور پاکستانی یونیورسٹیوں کے بلند و بانگ دعوے

جب سے کرونا کی وبا پھیلی ہے اس سے نبٹنے کے لئے ایک نہیں دو دو جانب سے امید افزا مشوروں اور خبروں کا سامنا ہے۔ ایک طرف تو وہ ہیں جو کہ زیتون، کلونجی، وضو اور وظیفوں سے کرونا سے نبرد آزما ہونے کے طریقے بتا رہے ہیں۔ دوسری جانب پاکستان میں اہل سائنس…

Read more