فاتح نواز شریف

زندانوں کے دروازے کھل گئے۔ نواز شریف کا صبر، استقامت اور مظلومیت‘ رنگ لے آئے۔ ریاستی نظم کو متحرک ہونا پڑا۔ اِس کے سوا، اُس کے پاس کوئی چارہ نہیں تھا۔ لیکن اس المیے کا کیا کیا جائے کہ وہ متحرک ہوا بھی تو بعد از خرابیٔ بسیار۔ سیاسی حرکیات کا ادراک ہوا بھی تو…

Read more

نواز شریف: فرد سے علامت تک

نواز شریف اب ایک فرد نہیں، ایک علامت کا نام ہے: مزاحمت کی علامت۔ یہ عام لوگ ہی ہوتے ہیں جنہیں کوئی ایک واقعہ، ایک نعرہ مستانہ، فرد سے علامت بنا دیتا ہے۔ تاریخ کے کسی موڑ پر وہ جرأتِ رندانہ کا مظاہرہ کرتے ہیں اور ماہ و سال سے اٹھ جاتے ہیں۔ پھر تاریخ…

Read more

سیاست کے مقتل میں کھڑے نوازشریف

نواز شریف سیاست کے مقتل میں کھڑے ہیں اور ن لیگ وقت کی عدالت میں۔ایک طرف نشترِ قاتل سے قطرہ قطرہ موت ٹپک اور رگِ جاں میں اتر رہی ہے۔ نواز شریف اس کی چاپ سن رہے ہیں جو لحظہ لحظہ قریب آتی جا رہی ہے۔ دوسری طرف ن لیگ کی صفوں میں کوئی اضطراب…

Read more

مولانا فضل الرحمن اور تشدد کی سیاست

مولانا فضل الرحمن پر لگے ہر الزام کی مضبوط یا کمزور دلیل ہو سکتی ہے‘ مگران کی طرف تشدد کی نسبت کسی طرح ثابت نہیں۔مولانا پاکستان کے واحد مذہبی سیاست دان ہیں‘ جو تشددپر یقین نہیں رکھتے‘ لیکن کیااس کی ضمانت دی جا سکتی ہے کہ وہ مستقبل میں بھی غیر متشدد رہیں گے؟ ہمیں…

Read more

تحریکِ انصاف کا نوجوان اب کہاں جائے؟

عمران خان صاحب نے نوجوانوں کی ایک بڑی تعداد کو سیاسی اعتبار سے متحرک کیا ہے۔ ایسے نوجوان جنہیں سیاست سے کوئی دلچسپی نہیں تھی۔اس عدم دلچسپی کے اسباب متنوع تھے۔ سیاسی عمل اور مباحث سے وہ دور تھے کہ تعلیمی نظام اس کا شعور پیدا کرتا ہے نہ ذوق۔ سماجی سطح پر بھی سیاسی…

Read more

نواز شریف اور عمران خان

نواز شریف اور عمران خان، دونوں آج وہ نہیں ہیں جو بیس سال پہلے تھے۔ دونوں ارتقا کے مراحل سے گزرے ہیں۔ نواز شریف حقیقت پسندی سے رومان کی طرف آئے ہیں۔ عمران خان رومان سے حقیقت پسندی کی طرف۔ نواز شریف صاحب کی سیاست کا آغاز، سب جانتے ہیں کہ جنرل ضیاالحق کی چھتری…

Read more

’’یہ‘‘ دھرنا اور ’’وہ‘‘ دھرنا

تاریخ اتنا جلدی خود کو دھرائے گی، شاید ہی کسی کو اندازہ ہو۔ سیاسی حرکیات کا ادراک رکھنے والوں کا معاملہ مگر دوسرا ہے۔بات یہاں سے شروع ہوئی کہ 'سب ایک پیج پر ہیں‘ اگر سب ایک پیج پر ہیں تو عدم استحکام کا خوف کیسا؟ جب 2014ء کا دھرنا ہوا تو سب ایک پیج…

Read more

غزوہ ہند کی روایات

'غزوہ ہند‘ کی روایات ایک بار پھر زیرِ بحث ہیں۔ تحریکی اور صحافیانہ ضروریات کے زیرِ اثر، ان روایات پر جس طرح مضامین باندھے جا رہے ہیں، لازم ہے کہ ان کا علمی جائزہ لیا جائے۔ 'تحریکیت‘ اور 'صحافتی پاپولزم‘ ہیجان کا مطالبہ کرتے ہیں۔ جذبات کا کھیل ایک نقد سودا ہے۔ اِس ہاتھ دے،…

Read more

عمران خان کا بت ٹوٹ چکا، بت تراشنے والوں کا احتساب باقی ہے

صف بچھ گئی اور ماتم کا آغاز ہو چکا۔ کسی کو صدمہ ہے کہ بیس سال کی محنت رائیگاں گئی۔ کسی کو اپنے فنِ بت گری پر شک ہونے لگا ہے کہ جو خد و خال اس نے تراشے تھے، وہ کسی ابنِ مریم کے نہیں تھے۔ پتھر کے اندر سے بھی ایک پتھر ہی…

Read more

آزادی مارچ: امکانات اور خدشات

ایک عجیب و غریب حکومت کا ہمیں سامنا ہے۔ اس کارکردگی کے ساتھ، جب سماج کا ہر طبقہ اس سے نالاں اور آہ و فغاں کر رہا ہے، حکومت مخالفین کو دعوتِ مبارزت دے رہی ہے۔ اپوزیشن کی دو بڑی جماعتیں حکومت مخالف تحریک اٹھانے سے گریزاں ہیں‘ مگر حکومت سرتوڑ کوشش میں ہے کہ…

Read more