حالیہ عورت مارچ اور مخصوص مائنڈسیٹ کی پریشانی

حالیہ عورت مارچ سے صرف دو نعرے پیش ہیں۔
”میرا جسم میری مرضی“
”اپنا بستر خود گرم کرو اور اپنی ڈِک پکچر اپنے پاس رکھو! “

یہ نعرے تازیانے کی طرح لگے اور فیس بک کے صفحات نیکو کار مردوں اور نیک پروین بیبیوں کی بلبلاہٹ سے بھر گئے۔ ان کی بلبلاہٹ میں کئی نام نہاد لبرلز نے بھی متوازن سوچ کے نام اپنے سُر شامل کرنے ضروری سمجھے کہ کہیں فحاشی کے حامیوں میں شمار نہ کر لیے جائیں۔ یعنی ان کے نزدیک صدیوں سے جاری ننگے ظلم کے خلاف اتنا بلند آہنگ احتجاج فحاشی ٹھہرا۔ ہمارے یہ لبرلز حالیہ مارچ میں متحرک خواتین کو متوازن اور ماڈریٹ فیمنزم اپنانے کے ناصحانہ مشورے دیتے پائے گئے۔

Read more