مولا جٹ کی واپسی

پاکستانی فلمی صنعت کی تاریخ کا ذکر ہو اور مولا جٹ ذہن میں نہ آئے یہ ممکن نہیں۔ مولاجٹ پاکستانی سینما کی تا ریخ کا ایک روشن باب ہے۔ اس بات میں کوئی دو رائے نہیں کہ مولا جٹ کا شمار کلاسیکل فلموں میں ہو تا ہے اور یہ بھی حقیقت ہے کہ دہائیوں تک پاکستانی فلم انڈ سٹری پر اس فلم کی چھاپ رہی۔

مولا جٹ 11 فروری 1979 کو نما ئش کے لیے پیش کی گئی۔ ہدایت کار یونس ملک جبکہ مصنف ناصر ادیب اور فلم کی موسیقی ما سٹر عنائت حسین نے ترتیب دی۔ اس فلم کا پس منظر مشہور افسانہ نگار احمد ندیم قاسمی کے مشہور افسانے گنڈاسہ سے ماخوذ تھا جو کہ پنجاب کا مخصوص دیہی پس منظرلیے ہوئے تھا۔ ناصر ادیب نے اسے فلمی قالب میں ڈھال کر امر کر دیا۔ فلم کا شمار پاکستانی فلمی تاریخ کی بلاک بسٹر میں کیا جا تا ہے۔ اگر اس وقت کوئی سو کروڑ کلب کا وجود ہوتا تو یقیناً مولا جٹ اس کلب میں سرفہرست ہوتی۔

Read more