اقرار پسند معاشرے میں حرف انکار کا مرتکب جج اور تاریخ کا فیصلہ

پاکستان میں بائیں بازو کے معروف ترقی پسند ادیب، صحافی اور سیاسی کارکن سبط حسن کے ایک مضمون "انکار کی جرآت" کی ابتدائی چند سطروں سے حظ ااٹھاتے ہیں۔ وہ ایک "اقرار پسند " معاشرے کی بابت رقم طراز ہیں، " ایک اقرار پسند معاشرے کا اسم اعظم ایک چھوٹا سا سہ حرفی لفظ "ہاں"…

Read more

سیاسی قیادت، قبائلی علاقے اور نیا بحران

جن خدشات سے دل ہلکان ہو رہے تھے وہ تلخ حقائق کی صورت میں ڈھل چکے ہیں۔ جس دھڑکے سے ذہن و دل میں بے چینی کی لہریں دوڑ رہی تھیں وہ آخر کار ایک سنگین صورتحال کے قالب میں ڈھل کر ایک نئے قضیے کو جنم دے چکی ہے۔ ارض وطن نت نئے قضیوں، جھگڑوں اور آویزشوں میں کافی خودکفیل ہے کہ ایک کی تلاش کرو تو کئی مل جاتے ہیں۔ یہ خرابی کہاں سے پیدا ہوئی وہ ایک طویل بحث ہے کہ جس کی طوالت کا یہ کالم متحمل نہیں ہو سکتا لیکن اتنا ضرور ہے کہ یہ خرابی روز اول سے ہمارا مقدر ہے کہ جو آئے روز ہماری حرماں نصیب کو گہرا کرتی چلی جارہی ہے۔

Read more

حسرت موہانی اور سیاست دانوں کی جیل یاترا

سیاست دانوں کے جیل کاٹنے کی ریت اس خطے میں بہت پرانی ہے۔ تقیسم ہند سے قبل اور اس کے بعد سیاستدانوں کا پس زنداں ہونا ہمیشہ سے فخر و مباہات کے زمرے میں گردانا گیا ہے۔ تقسیم ہند سے پہلے ایک سامراجی قوت کے سامنے ڈٹ جانے والے سیاستدان حریت فکر کے جذبے سے…

Read more

عمران خان نرگسیت نہیں، حقیقت پسندی سے کام لیں

ملکی حالات اس وقت سنگین اور تشویشناک صورتحال کا شکار ہیں۔ تحریک انصاف کی مرکزی حکومت مختلف محاذوں پر نبرد آزما ہو کر حالات کو ٹھیک کرنے کی تگ و دو میں مصروف عمل ہے تاہم اس کے بارے میں یہ تاثر انتہائی تیزی سے پھیل رہا ہے کہ موجودہ حکومت کے اندر اہلیت اور…

Read more

It’s the economy, stupid

1992 میں سابق امریکی صدر بل کلنٹن نے اپنی انتخابی مہم میں نعرہ بلند کیا کہ”It ’s economy، the stupid“’’نادان، یہ معیشت ہی ہے۔‘‘ بل کلنٹن نے اس وقت امریکا کی معیشت کی نا گفتہ صورت احوال پر سیاسی مخالفین کو آڑے ہاتھوں لے کر انتخاب جیت لیا۔ عمران خان نے دور اپوزیشن میں حکمران طبقات کو معیشت کی زبوں حالی اور ابتر صورت احوال پر جس طرح رگیدا اس کی باز گشت ابھی تک یاداشتوں میں گونج رہی ہے۔ اگر کسی کو مزید ثبوت درکار ہوں تو ٹوئٹر پر خان صاحب کے اکاؤنٹ کے ماضی کو کھنگال لے کہ جس پر حکمرانوں کے خراب معیشت پر لتے لینے کی داستانیں بکھری پڑی ہیں۔

Read more

تحریک انصاف کا یوم تاسیس: سفر تو رائیگاں رہا

تحریک انصاف کا 23 ویں یوم تاسیس اس لحاظ سے منفرد ہے کہ یہ پارٹی کے اقتدار میں آ نے کے بعد پہلا یوم تاسیس ہے۔ گزشتہ برس جب تحریک انصاف نے یوم تاسیس منایا تھا تو اس وقت وہ اقتدار سے چند ماہ کی مسافت پر تھی۔ سال رفتہ میں تحریک انصاف اقتدار میں…

Read more

مطلق العنان حکمرانوں کا نمبر زیادہ دکھانے کا خبط

مصر کے صدر الفتاح السیسی نے اپنے طوالت اقتدار کے لیے ملک میں ہونے والے ریفرنڈم میں کامیابی حاصل کر لی ہے۔ اس ریفرنڈم میں السیسی نے اٹھاسی فیصد سے زائد ووٹ حاصل کر کے کامیابی حاصل کی۔ یاد رہے کہ آئینی اصلاحات کے نام پر صدر السیسی کے اقتدار کو طوالت دینے کے لیے منعقد کیے گئے اس ریفرنڈم کا حزب اختلاف کی جماعتوں نے بائیکاٹ کیا اور اس ریفرنڈم کو متنازع قرار دیا۔ یہ ذہن نشین رہے کہ صدر السیسی کسی جمہوری عمل کی پیداوار نہیں۔

Read more

کالی بلی اور الٹا پائنچہ

تحریک انصاف کی حکومت ایک مشکل دوراہے پر کھڑی تھی۔ آٹھ ماہ میں اسے بہت ساری مشکلات اور مصائب کا سامنا کرنا پڑا۔ مسائل کے گرداب میں پھنسی ہوئی حکومت کے لیے قطعی طور پر ان وزرا کو دوش نہیں دیا جا سکتا جنہیں حال ہی میں کابینہ میں ردوبدل کی وجہ سے اہم وزارتوں…

Read more

شہری اور دیہی سندھ کی نمائندہ سیاسی جماعتوں میں چپقلش

سندھ کی سیاست کی میں تین عشروں سے وقتاً فوقتاً حریف و حلیف رہنے والی پاکستان پیپلز پارٹی اور متحدہ قومی موومنٹ پاکستان آج ایک بار پھر ایک دوسرے کے خلاف برسر پیکار ہیں۔ دونوں جماعتوں کے درمیان تازہ ترین چپقلش دراصل صوبہ سندھ میں وہ اس لسانی تفریق کا شاخسانہ ہے جس نے صوبے…

Read more

عوام کے پیسوں کی لوٹ کھسوٹ: احمد شاہ ابدالی سے آغا سراج درانی تک

سندھ اسمبلی کے اسپیکر آغا سراج درانی ان دنوں آمدن سے زائد اثاثوں بنانے کے مقدمے میں زیر حراست ہیں۔ قومی احتساب بیورو نے سراج درانی پر جو الزامات عائد کیے ہیں ان میں حکومتی خزانے میں غبن کر کے جائیدادیں اور اثاثے بنانے شامل ہیں۔ حکومتی خزانہ محصولات کے ذریعے بھرا جاتا ہے جو…

Read more
––>