چھ ہزار عورتوں کے ساتھ جنسی تعلق قائم کرنے والے پلے بوائے کو من چاہی موت مل گئی

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

اٹلی کے مشہور پلے بوائے 63 سالہ ماریزیو زنفنتی، 23 سالہ سیاح کے ساتھ ’محبت کا عمل‘ کرتے دل کی بازی ہار گئے۔ خبر کے مطابق، وہ مشرقی یورپ کی ایک سیاح کے ساتھ اپنے گھر میں رنگ رلیاں منا رہے تھے، جب انھیں ہارٹ اٹیک ہوا۔ ان کی تئیس سالہ پارٹنر نے فوری طبی امداد کے لیے کال کی، لیکن یہ بے سود رہا۔

چھہ ہزار سے زائد عورتوں سے جنسی تعلق قائم کرنے کا دعوی کرنے والے ماریزیو زنفنتی جنھیں ’رومیو آف رمینی‘ کے نام سے بھی جانا جاتا ہے، نے 1970 کی دہائی میں ساحل پر قائم نائٹ کلب پروموٹر کے طور پر اپنے کیریئر کا آغاز کیا۔ ان کے فرائض میں نائٹ کلب کے باہر دوشیزاوں سے بات چیت کر کے ان کی جھجک دور کر کے نائٹ کلب کے اندر آنے پر مائل کرنا تھا۔ تب ان کی عمر محض سترہ سال تھی۔ 1986 میں اٹلی کے ایک اخبار نے انھیں ’اٹلی کے سب سے کام یاب پریمی‘ کا نام دیا۔

2014 میں جرمنی کے ایک اخبار کو اپنے آخری انٹرویو میں، انھوں نے اپنی رِٹائر منٹ کا اعلان یہ کہہ کر کیا، کہ انسٹھ سال کی عمر میں وہ اب ’اس کام‘ کے لیے خود کو بوڑھا محسوس کرتے ہیں۔ لیکن جیسا کہ دیکھنے میں آیا، وہ اپنے ہی لفظوں کی لاج نہ رکھ سکے۔ ان کی موت پر اطالوی میڈیا نے کہا، کہ یہ ایسا ہی اختتام تھا جو ماریزیو زنفنتی نے خود اپنے لئے منتخب کیا ہوتا۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •