مردانہ کمزوری کے علاج میں عام دستیاب ہونے والی دوا ویاگرا سے بھی زیادہ موثر

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

مردوں میں جنسی کمزوری کے مسئلے کی وجہ دوران خون کی خرابی ہوتی ہے اور یہ مسئلہ مہنگےعلاج سے بھی رفع نہیں ہوتا تاہم اب ترک سائنسدانوں نے ہرگھر میں پائی جانے والی ایک عام سی گولی کے ذریعے اس کا انتہائی آسان علاج بتا دیا ہے

خبر کے مطابق یہ گولی ”اسپرین“ ہےجس کے متعلق استنبول کی میڈی پول یونیورسٹی کے سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ اگر مردانہ کمزوری کے مسئلے سے دوچار مرد اسپرین کی روزانہ ایک گولی مسلسل 6 ہفتے تک کھائیں تو انہیں اس مسئلے سے نجات مل جائے گی۔

رپورٹ کے مطابق سائنسدانوں نے اس تحقیق میں 184 ایسے مردوں پر تجربات کیے جن کی عمراوسطاً 48 سال تھی اور وہ اس مرض کا شکار تھے۔

 انہیں دو گروپوں میں تقسیم کرکے سائنسدانوں نے ایک گروپ کو 6 ہفتے تک روزانہ اسپرین کی ایک گولی کھلائی جبکہ دوسرے گروپ کو نقلی گولی دی جاتی رہی۔ اس سے دوسرے گروپ کے لوگوں کو بھی یہ احساس رہتا ہے کہ وہ بھی گولی کھا رہے ہیں لیکن گولی کا کوئی منفی یا مثبت اثر نہیں ہوتا۔

تقریباً چھ ہفتے بعد ماہرین نے دوبارہ ان کے مرض کے تجزیات کیے تو حیران کن نتائج سامنے آئے۔  نقلی گولی کھانے والوں کو کوئی فرق نہیں پڑا تھا جبکہ جو لوگ روزانہ اسپرین کی گولی کھا رہے تھے ان کا 50 سے 88.3 فیصد تک مرض ختم ہو گیا تھا۔

 جنسی تقویت کی گولی ’ویاگرا‘ کھانے سے یہ شرح 48 سے 81 فیصد ہوتی ہے۔ چنانچہ اس تحقیق میں اسپرین کے نتائج ویاگرا سے بھی بہترسامنے آئے۔

تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ ڈاکٹر ذکی بائراکتر کا کہنا تھا کہ بعض لوگوں کے خون میں موجود پلیٹ لیٹس بہت بڑے ہوتے ہیں جو دوران خون میں رکاوٹ بنتے ہیں۔

اسپرین کی گولی ان سمیت دوران خون میں رکاوٹ کی دیگر وجوہات کو دور کر دیتی ہے جس کے نتیجے میں مردوں کا یہ جنسی مسئلہ حل ہو جاتا ہے۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •