شادی کے بغیر پارٹنرشپ کے دوران محبوب کے تشدد سے فرار ہونے والی فلورا ساینی صف اول کی اداکارہ کیسے بنی؟

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

آج بھارت کی معروف اداکارہ فلورا ساینی 2006-2007 میں شادی کے بغیر پروڈیوسر گیرانگ دوشی کے ساتھ ایک چھت تلے رہ رہی تھیں۔ راج کمار راو اور شردھا کپور کی فلم استری میں زبردست کامیابی کے بعد فلورا نے نے اپنے ساتھ ہوئے گھریلو تشدد پر کھل کر بات کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

فلورا نے کہا کہ میں نے گیرانگ دوشی کا کا گھر ایک ٹوٹے ہوئے جبڑے کے ساتھ چھوڑا تھا تاکہ میں اپنی زندگی بچا سکوں ۔ اس کے ساتھ ہی میں نے فیصلہ کیا تھا کہ میں اس کو کورٹ لے کر جاوں گی اور ذہنی اور جسمانی طور پر اس نے مجھے جو نقصان پہنچایا تھا ، اس کی سزا دلواؤں گی ۔

فلورا نے بتایا کہ گیرانگ نے انہیں دھمکی دی تھی۔ وہ مجھ کو دھمکی دیتا تھا کہ میں پروڈیوسر ہوں، تم میرے خلاف عدالت میں جاؤ گی تو میں بھی اس بات کا خیال رکھوں گا کہ آئندہ تمہیں کوئی کام نہ ملے۔ ابتدا میں لوگوں نے مجھے کام دینا بند کردیا تھا ۔ کیونکہ میں نے گیرانگ دوشی کے خلاف شکایت درج کروائی تھی۔ اس نے جو کہا تھا، میرے ساتھ وہی ہو رہا تھا۔ لیکن میں نے کچھ غلط نہیں کیا تھا۔ میرے ساتھ زیادتی ہوئی تھی۔ بھگوان کی مہربانی سے حالات بہتر ہونے لگے اور مجھے کچھ پروجیکٹس ملے ۔ اس طرح مجھے فلم استری میں کردار ملا۔ یہ فلم میرے لئے گیم چینجر ثابت ہوئی۔

فلورا نے بتایا کہ میرے کچھ دوستوں نے مجھ سے کہا کہ تم نے اس فلم مین بھوت کی بجائے کوئی دوسرا کردار منتخب کیا ہوتا، کم سے کم تمہارا چہرا تو نظر آتا ۔ لیکن اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا۔ میں 100 کروڑ کمانے والی فلم کا حصہ بنی۔ میرے ایکس گیرانگ دوشی نے کہا تھا کہ میں کبھی ایسا نہیں کر پاؤں گی۔ اب لوگ مجھے میرے نام سے جانتے ہیں، میں نے ایسا کبھی نہیں سوچا تھا ۔

فلورا نے بتایا کہ وہ اب بھی انصاف کیلئے لڑائی لڑ رہی ہیں ۔ می ٹو مہم نے کافی کچھ بدل دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جو معذرت مجھے اس آدمی سے کبھی نہیں ملی ، وہ مجھے کئی دوسرے لوگوں سے ملی ، جنہیں میرے ساتھ اس واقعہ کے بارے میں جان کر افسوس ہوا ۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •