چین نے ایران میں 280 ارب ڈالرز کی سرمایہ کاری کا اعلان کر دیا

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

چین نے سی پیک کے مقابلے میں پاکستان کے پڑوسی ملک ایران میں 280 ارب ڈالرز کی سرمایہ کاری کا اعلان کیا ہے۔ چین کی جانب سے ایران کی پیٹرولیم انڈسٹری کی اپ گریڈیشن کے لئے اربوں ڈالرز کی سرمایہ کاری کی جائے گی، جبکہ مواصلات کے نظام کی بہتری کے لئے بھی 120 ارب ڈالرز کا پیکج دیا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق چین نے کسی بھی ملک کے لئے اپنی تاریخ کی سب سے بڑی بیرونی سرمایہ کاری کا اعلان کیا ہے۔ چین اور ایران کے درمیان پیٹرولیم انڈسٹری میں تعاون پر اتفاق طے پایا ہے۔ ایرانی میڈیا کے مطابق چین کی جانب سے ایرانی کی پیٹرولیم انڈسٹری اور دیگر شعبوں کے لئے 280 ارب ڈالرز کی سرمایہ کاری کی جائے گی۔ جبکہ چین کی جانب سے چین کے مواصلاتی نظام کی بہتری کے لئے بھی 120 ارب ڈالرز کی مزید سرمایہ کاری کی جائے گی۔

بتایا گیا ہے کہ چین ایران کے تیل و گیس کے شعبہ میں مزید سرمایہ کاری کرنے کا بھی ارادہ رکھتا ہے۔ چین ایران کے تیل کے ذخائر تک رسائی حاصل کرکے اپنے توانائی کے ذخائر میں مزید اضافہ کرنے کا خواہاں ہے۔ بتایا گیا ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان 25 سالہ معاہدہ طے کیا جائے گا۔ تاہم ابھی یہ واضح نہیں ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان یہ تاریخی معاہدہ کب طے پائے گا۔ اس معاہدے کو ایران کی مغربی طاقتوں کے خلاف بڑی فتح قرار دیا جا رہا ہے۔

اس معاہدے پر عمل درآمد ہونے کی صورت میں ایران اپنی مصنوعات کو چین کی مدد سے بین الاقوامی مارکیٹوں تک لے جا سکے گا۔ جبکہ چین کی اس سرمایہ کاری سے ایران کے سلامتی کونسل کے دو مستقل اراکین یعنی چین اور روس سے تعلقات مزید مضبوط ہو جائیں گے۔ ایران اور چین کا یہ معاہدہ ون بیلٹ ون روڈ میگا منصوبے کا ہی حصہ ہو گا۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •