پاک فوج نے القاعدہ کو ٹریننگ دی: وزیر اعظم عمران خان

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

وزیر اعظم عمران خان نے اعتراف کیا ہے کہ پاک فوج نے ماضی میں القاعدہ جیسی عالمی دہشت گرد تنظیم کو ٹریننگ دی تھی۔

امریکی تھنک ٹینک فارن ریلیشن کونسل میں صحافیوں سے گفتگو کے دوران وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستانی فوج اور آئی ایس آئی نے القاعدہ اور دیگر گروپوں کو افغانستان میں لڑنے کے لئے ٹریننگ دی۔ اس لیے پاکستان کے ان کے ساتھ تعلقات تھے اور ان کے تعلقات ہونے بھی چاہئیں تھے کیونکہ انہوں نے ٹریننگ پاکستان سے حاصل کی تھی۔

وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ روس کے افغانستان سے نکل جانے کے بعد امریکہ نے پاکستان کو تنہا چھوڑ دیا۔ نائن الیون کے بعد امریکہ کو پھر پاکستان کی ضرورت پڑی لیکن پاکستان کا امریکہ کی دہشت گردی کے خلاف جنگ کاحصہ بننا تاریخ کی سب سے بڑی غلطی تھی۔ نائن الیون کے بعد امریکہ نے اچانک مجاہدین کو دہشت گرد کہنا شروع کردیا۔

وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ نائن الیون کے بعد 180 ڈگری کا ٹرن لیا گیا اور ان گروپوں کے خلاف کارروائیاں شروع کردی گئیں۔ بہت سے لوگ ان کے خلاف کارروائی پر ہمارے ساتھ متفق نہیں تھے جبکہ ہماری آرمی بھی اس پر راضی نہیں تھی۔ جب ان گروپوں کے خلاف کارروائی کی گئی تو پاکستان میں بہت زیادہ حملے ہوئے، یہاں تک کہ اس وقت کے صدر مشرف پر بھی دو بار حملہ ہوا۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •