دو ٹکے کی لڑکی اور ٹکے ٹوکری معیشت

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

دیکھنے میں بڑے اینٹیلیجنٹ بزنس مین لگتے ہیں آپ، لیکن یہاں بھاؤ کرتے ہوئے آپ نے مجھے حیران کر دیا اس دو ٹکے کی لڑکی کے لیے آپ مجھے پچاس ملین دے رہے تھے۔

یہ جملہ حال ہی میں ایک پاکستانی نجی ڈرامے میں بولا گیا اور دیکھتے ہی دیکھتے ہر جگہ موضوع بحث بن گیا، کچھ لوگ ایسے عورت کی تذلیل سے جوڑتے نظر آئے تو کچھ حلقوں سے اس جملے کے حق میں آواز بلند ہوئی۔ میرے کانوں نے بھی اس جملے کی گونج سنی، اس جملے کا جو ایک لفظ میرے ذہن میں اٹک گیا وہ لفظ تھا ٹکا۔ یہ تو سبھی جانتے ہیں کہ بنگلادیشی کرنسی کا نام ٹکا ہے اور جب بنگلادیش آزاد ہوا تب پاکستانی روپے کے مقابلے میں ٹکے کی حیثیت بہت کم تھی اور جب سے پاکستان میں یہ مثال دی جانے لگی کہ ہر وہ چیز جو کم قیمت کی ہو أسے ٹکے سے جوڑ دیا جاتا۔

مجھے جستجو ہوئی کہ کیا واقعی اج بھی ٹکا اتنا کمزور ہے؟

اگر پاکستان اور بنگلادیش کی معیشت پر نظر ڈالی جائے تو یہ جان کر آپ کو افسوس ہوگا کہ ہم سے بعد میں وجود میں آنے والا ملک ہم سے کئی شعبوں میں آگے ہے۔ پاکستان کی آبادی تقریباً 22 کروڑ اور جبکہ بنگلادیش کی آبادی تقریباً 16 کروڑ ہے۔

پاکستان کی معیشت دنیا کی 24 بڑی معیشت ہے، 2017 کی ورلڈ بینک کی رپورٹ کے مطابق پاکستان کا جی ڈی پی 305 بلین ڈالر اور جی ڈی پی میں اضافے کی شرح 5.7 فیصد ریکارڈ کی گئی جبکہ بنگلادیش کا جی ڈی پی 249.7 بلین ڈالر اور جی ڈی پی میں اضافے کی شرح 7.3 فیصد تھی۔

اگر غربت کی بات کی جائے تو پاکستان میں 29.5 فیصد لوگ غربت کی لکیر سے نیچے رہتے ہیں اور جبکہ بنگلادیش میں غربت کی شرح 28.1 فیصد ہے۔ 2018 تک اگر بیروزگاری کا تناسب دیکھا جائے تو پاکستان میں یہ شرح 5.7 فیصد تھی جبکہ بنگلادیش میں بیروزگاری کی شرح 4.3 فیصد ریکارڈ کی گئی۔

چلیں اب کچھ بات کرتے ہیں تجارت کی تو 2018 میں اگر دونوں ممالک کے اعداد و شمار کا جائزہ لیا جائے تو بنگلادیش پاکستان سے اگے دکھائی دیتا ہے۔ سال 2018 کی اگر بات کی جائے تو پاکستان کی برآمدات 24.8 بلین ڈالر، درآمدات 56.8 بلین ڈالر اور اس کا تجارتی خسارہ 32 بلین ڈالر تھا جبکہ ایسی دوران بنگلادیش نے برآمدات 41 بلین ڈالر کے لگ بھگ کی اور درآمدات 46 بلین ڈالر کے آس پاس رہی جبکہ اس کا تجارتی خسارہ محض 5 بلین ڈالر تھا۔

صنعتی پیداوار میں اضافے کی شرح پر اگر نظر ڈالیں تو سال 2017 میں بنگلادیش میں یہ شرح 8 فیصد اور جبکہ پاکستان میں میں صرف 5 فیصد رہی۔ سال 2014 میں ٹیکسٹائل کی صنعت نے بنگلادیش میں 25 بلین ڈالر کی درآمدات کی جب کہ پاکستان 11.6 بلین ڈالر کا ہدف عبور کر سکا۔

بنگلادیش میں اوسط عمر 72 سال اور پاکستان میں 66 سال ہوتی ہے۔ مطلب صحت کے شعبے میں بھی ٹکا روپیے کو پیچھے چھوڑ رہا ہے۔

تیرہویں طاقتور فوج ہونے کے باوجود محفوظ ممالک کی فہرست میں پاکستان کا نمبر 143 اور بنگلادیش اس فہرست میں 88 نمبر پر ہے۔

1971 میں بننے والے ملک میں 1 ڈالر 88 ٹکے کا ہے اور جب کے ہمارے پاکستان میں 1 ڈالر کم او بیش 157 کا ہے۔

یہ سب جاننے کے بعد میرا دل نہیں مانتا کہ اس جملے میں استعمال کیا گیا لفظ ٹکا صحیح تھا۔

اور رہی بات 50 ملین دینے کی تو میاں بیوی جیسے مقدس رشتے میں دھوکا چاہے لڑکا دے یا لڑکی دے، ہوتے واقعی دو پیسے کے انسان ہی ہیں۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •