خسرو بختیار اور جنوبی پنجاب کے دیگر سیاستدان فوج کی گارنٹی پر پی ٹی آئی کے ساتھ شامل ہوئے: روف کلاسرا

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

چینی اور گندم بحران کی تحقیقات رپورٹ میں جہانگیر ترین کا نام بھی سامنے آ رہا ہے جنہوں نے حکومت قائم کرنے میں وزیراعظم عمران خان کا سب سے زیادہ ساتھ دیا تاہم اب سینئر صحافی روف کلاسرا نے ایک اہم انکشاف کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سینئر صحافی روف کلاسرا نے اپنے یو ٹیوب چینل پر ویڈیو میں دعویٰ کیا ہے کہ جب جہانگیر ترین نے حکومت کے قیام کے لئے کوششیں شروع کیں تو اس دوران ان کی صوبہ محاذ والوں سے بھی بات چیت شروع ہوئی اور انہیں کہا کہ آپ آئیں اور ہمیں جوائن کریں۔ جس پر صوبہ محاذ نے جواب دیا کہ ہم جوائن نہیں کرتے کیونکہ ہمیں کیا گارنٹی ہے کہ کون ہمارے ساتھ بیٹھ کر بات چیت کرے گا، آپ تو خود عمران خان کے رحم و کرم پر ہیں ۔

روف کلاسرا کے مطابق جہانگیر ترین نے صوبہ محاذ والوں سے کہا کہ آپ ہماری ٹکٹیں لیں ، لیکن انہو ں نے ٹکٹیں لینے سے انکار کر دیا اور کہا کہ آپ ہمیں علیحدہ علیحدہ الیکشن لڑنے دیں ، آپ بس ہمارے خلاف اپنے امیدوار نہ لائیں ۔ صوبہ محاذ نے جہانگیر ترین کی گارنٹی ماننے سے انکار کر دیا۔ صوبہ محاذ کو خسرو بختیار دیکھ رہے تھے۔ تو طے یہ ہوا کہ فوجی بھائی درمیان میں بیٹھیں گے اور گارنٹی دیں گے۔ اس کے بعد صوبہ محاذ والوں کی کچھ ملاقاتیں ہوئیں اور انہیں گارنٹی دی گئی کہ جو کچھ طے کیا جا رہا ہے، وہ پورا کیا جائے گا ۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *