آمر پرویز مشرف، نواز شریف اور عدالتی ریمارکس

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی پر مشتمل ڈویژن بینچ کی عدالت نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کی ایون فیلڈ اور العزیزیہ ریفرنس میں سزا کے خلاف کیس کی سماعت کی۔

کیس کی سماعت کے دوران میں جسٹس محسن اختر کیانی نے ریمارکس دیے کہ نواز شریف کو پتا ہے کہ وہ پورے سسٹم کو شکست دے کر باہر گئے ہوئے ہیں۔ وہ باہر بیٹھ کر حکومت اور اس ملک پر ہنستا ہو گا۔ یہ ایک شرمناک طرز عمل ہے حکومت کو بھی آئندہ سوچنا چاہیے۔

ایڈیشنل اٹارنی جنرل طارق کھوکھر نے عدالت کو بتایا کہ نواز شریف نے پھر وارنٹ گرفتاری وصول کرنے سے انکار کر دیا۔ نواز شریف کے وارنٹ گرفتاری کی قونصل اتاشی کے ذریعے پھر تعمیل نہ ہو سکی۔ قونصل اتاشی حسن نواز کے سیکرٹری کی درخواست پر دوبارہ وارنٹ لے کر گئے مگر کسی نے وصول نہیں کیے۔

ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے اپنی بات جاری رکھتے ہوئے عدالت کو یہ بھی بتایا کہ قونصل اتاشی حسن نواز کے سیکرٹری وقار احمد کے فون کرنے پر دوبارہ وارنٹ لے کر گئے تھے۔ ذاتی حیثیت میں پہلی بار جانے پر بھی اتاشی سے کسی نے وارنٹ وصول نہیں کیے تھے۔

اس موقع پر عدالت نے استفسار کیا کہ کیا وارنٹ سے متعلق کوئی پیش رفت ہو سکی ہے؟ جس پر ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے عدالت کو بتایا کہ جی نہیں کوئی پیش رفت نہیں ہو سکی۔

قونصل اتاشی عبدالحنان ایون فیلڈ اپارٹمنٹس گئے تھے۔ مسٹر ایڈی نام کا شخص وہاں ملا۔ اس نے کہا، وارنٹ وصول نہیں کیے جائیں گے۔ گزرے روز ہمیں برطانیہ میں سفارتخانے سے جواب موصول ہو گیا۔ ہم نے قونصل اتاشی سے کہا ہے کہ وہ اپنا تصدیق شدہ بیان بھی بھیج دیں۔ قونصل اتاشی کا تصدیق شدہ بیان کسی بھی وقت پہنچ جائے گا۔

برطانیہ میں کاونٹی کورٹ کے ذریعے بھی وارنٹ کی تعمیل میں رکاوٹ ہو گی۔ کامن ویلتھ آفس سے رابطہ کیا گیا تھا۔ ہمیں بتایا گیا ہے کہ پاکستانی عدالت کے احکامات پر عملدرآمد کے وہ پابند نہیں ہیں۔

جس پر جسٹس عامر فاروق نے ریمارکس دیے کہ اس کا مطلب ہے، وہ ہمیں سہولت فراہم نہیں کریں گے۔ اس موقع پر ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے عدالت کو بتایا کہ دفتر خارجہ کے ڈائریکٹر یورپ محمد مبشر بھی عدالت میں موجود ہیں۔

جس پر جسٹس عامر فاروق نے ہدایات دی کہ آپ کے پاس جو دستاویزات آئی ہیں، انہیں باقاعدہ فائل کریں ہم ان دستاویزات کو دیکھ کر اپنا آرڈر جاری کریں گے۔ اشتہار جاری کرنے ہیں یا جو بھی کرنا ہے ہم دیکھیں گے ہم نے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کیے دیکھنا ہے کہ کیا جان بوجھ کر عدالتی کارروائی سے فرار ہوا جا رہا ہے؟

عدالت نے وارنٹ کی عدم تعمیل سے متعلق قونصل اتاشی کا تحریری بیان طلب کر لیا۔ اس موقع پر جسٹس محسن اختر کیانی نے ریمارکس دیے کہ ساری کارروائی مکمل کرنے کا ایک مقصد ہے۔ ہم چاہتے ہیں ملزم کل واپس آ کر یہ نہ کہے اسے پتا نہیں۔ اس موقع پر نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ ملزم خود کو جان بوجھ کر چھپا رہا ہے۔ جس پر جسٹس عامر فاروق نے ریمارکس دیے کہ وہ کیا چھپا رہا ہے؟ ملزم پوری قوم سے خطاب کر رہا ہوتا ہے۔

عدالت نے برطانیہ میں قونصل اتاشی کا ویڈیو لنک پر بیان ریکارڈ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ قونصل اتاشی کا بیان ریکارڈ کر کے آگے بڑھیں گے۔ نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ ویڈیو اسکینڈل میں نواز شریف کی اضافی دستاویزات کی درخواست بھی آج لگی ہے۔ ہماری استدعا ہے کہ نواز شریف کی اس متفرق درخواست کو بھی خارج کیا جائے۔ عدالت نے ریمارکس دیے کہ اس کیس کو بعد میں دیکھیں گے۔ عدالت نے نواز شریف سے ایون فیلڈ میں سزا معطلی ختم کرنے پر آئندہ منگل کو جواب طلب کر لیا ہے۔ نواز شریف کو ایون فیلڈ ریفرنس میں سزا معطلی ختم کرنے کی درخواست پر بھی نوٹس جاری کر دیے۔ یاد رہے کہ نیب نے ایون فیلڈ میں سزا معطلی کالعدم قرار دینے کی درخواست دائر کی تھی۔ قونصل اتاشی کا بیان بھی آئندہ بدھ کے دن ڈیڑھ بجے ریکارڈ کیا جائے گا۔ عدالت نے کیس کی سماعت آئندہ بدھ تک ملتوی کر دی۔

جس وقت عدلیہ کے معزز جج نواز شریف کے متعلق ریمارکس دے رہے تھے۔ عین اسی وقت میں سوچ رہا تھا کہ اسی عدالت میں سابق آمر پرویز مشرف کا کیس بھی زیر سماعت رہا۔ میں نے اس کیس کو بھی کور کیا اور میری سماعتوں نے آمر کے متعلق اس طرح کے ریمارکس نہیں سنے۔ بہت کہا گیا کہ جسٹس منیر کا نظریہ ضرورت دفن ہو گیا۔ اگر وہ دفن ہو گیا تو پھر آئین شکن مشرف کے لیے نرم گوشہ اور سویلین کے لیے سختی کیوں؟

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

بشارت راجہ

بشارت راجہ شہر اقتدار سے پچھلی ایک دہائی سے مختلف اداروں کے ساتھ بطور رپورٹر عدلیہ اور پارلیمنٹ کور کر رہے ہیں۔ یوں تو بشارت راجہ ایم فل سکالر ہیں مگر ان کا ماننا ہے کہ علم وسعت مطالعہ سے آتا ہے۔ صاحب مطالعہ کی تحریر تیغ آبدار کے جوہر دکھاتی ہے۔ وہ کہتے ہیں کہ وسعت مطالعہ کے بغیر نہ لکھنے میں نکھار آتا ہے اور نہ بولنے میں سنوار اس لیے کتابیں پڑھنے کا جنون ہے۔

bisharat-siddiqui has 129 posts and counting.See all posts by bisharat-siddiqui