اگر توہین عدالت نہ ہو تو۔۔۔ (غیرسیاسی افسانچہ)

” کام نہ کرنے والے افسروں کو گھر بھجوا دوں گا” جسٹس صاحب پہلے کیس میں دھاڑے۔

"درست تفتیش نہ کرنے والوں کی پیٹیاں اتروا دوں گا” دوسرے کیس میں پولیس والوں کو دھمکی لگی۔

"کسی کو ملکی خزانہ لوٹنے نہیں دوں گا” نیب کے ایک ریفرینس میں نامزدسیاستدانوں کی شامت آئی۔

"بی بی تم کیوں کھڑی ہو؟” جسٹس صاحب نے عدالت کے کونے میں کھڑی بوڑھی عورت سے استفسار کیا۔

” میرے سے اب اور پیشیاں نہیں بھگتی جاتیں” بوڑھی عورت نے ہاتھ جوڑ دیے ۔ "پتر، تھوڑا وقت ملے تو عدالتوں کو بھی ٹھیک کر دینا!”

Comments - User is solely responsible for his/her words