ایلون مسک کی دولت میں کمی نے ورلڈ ریکارڈ قائم کر دیا


ایلون مسک
ٹوئٹر کے مالک اور سپیس ایکس کے بانی ایلون مسک نے ایک نیا عالمی ریکارڈ قائم کر دیا ہے اور یہ ذاتی دولت کے سب سے بڑے نقصان کا عالمی ریکارڈ ہے۔ 

گنیز ورلڈ ریکارڈز نے اپنی ویب سائٹ پر ایک پوسٹ میں بتایا کہ نومبر 2021 سے دسمبر 2022 کے دوران ان کی دولت میں 165 ارب ڈالر کی کمی واقع ہوئی ہے۔ 

یہ اعداد و شمار فوربز میگزین کے ڈیٹا سے لیے گئے ہیں تاہم گنیز کا کہنا ہے کہ چند دیگر حوالوں کے مطابق ایلون مسک کو ہونے والا نقصان اس سے بھی زیادہ ہو سکتا ہے۔ 

گذشتہ برس اُنھوں نے جب ٹوئٹر خریدا تھا تو ان کی الیکٹرک گاڑیوں کی کمپنی ٹیسلا کے شیئرز میں گراوٹ دیکھی گئی تھی کیونکہ 44 ارب ڈالر میں ٹوئٹر خریدنے کے بعد سرمایہ کاروں کو خدشہ ہے کہ وہ ٹیسلا کو اتنی توجہ نہیں دے پا رہے۔ 

اس سے قبل ذاتی دولت میں سب سے بڑے نقصان کا ریکارڈ سنہ 2000 میں جاپانی ٹیکنالوجی سرمایہ کار مسایوشی سون کے پاس ہے جنھیں 58.6 ارب ڈالر کا نقصان ہوا تھا۔ 

یہ بھی پڑھیے

ایلون مسک خلا میں ہزاروں سیٹلائٹس کیوں بھیج رہے ہیں؟

’بے وقوف کی تلاش‘ میں ایلون مسک اپنے بعد کس کو ٹوئٹر کا سربراہ بنا سکتے ہیں؟

ٹوئٹر کی سربراہی چھوڑنے کا عندیہ: ایلون مسک سنجیدہ ہیں یا یہ ان کی کوئی چال ہے؟

نقصانات کا یہ تخمینہ ان کے شیئرز کی قیمت سے لگایا گیا ہے جو کہ اپنی کھوئی ہوئی قدر واپس حاصل کر سکتے ہیں۔ اس کا مطلب ہے کہ اُن کی دولت میں اضافہ بھی ہو سکتا ہے۔ 

دسمبر میں وہ دنیا کے امیر ترین شخص کی اپنی حیثیت سے اس وقت ہاتھ دھو بیٹھے جب ان کی جگہ فرانسیسی لگژری اشیا کی کمپنی لوئی ووٹون کے چیف ایگزیکٹیو برنارڈ آرنلٹ نے لے لی تھی۔ 

سنہ 2022 میں ٹیسلا کے شیئرز میں 65 فیصد کی گراوٹ دیکھی گئی جس کی ایک وجہ ٹیسلا کی کارکردگی ہے۔ کمپنی نے اس سال صرف 13 لاکھ گاڑیاں ڈیلیور کیں جو کہ وال سٹریٹ کی توقعات سے کہیں کم ہے۔ 

مگر شیئرز میں کمی کی سب سے بڑی وجہ ان کی جانب سے ٹوئٹر خریدنا ہے جہاں اُنھوں نے بڑی تعداد میں لوگوں کو نکالا ہے اور مواد پر نظرِثانی کی پالیسیاں تبدیل کی ہیں جس سے تنازعات پیدا ہوئے ہیں۔ 

ٹیسلا کے کئی سرمایہ کاروں کا ماننا ہے کہ اُنھیں برقی گاڑیاں بنانے والی کمپنی پر توجہ دینی چاہیے جس کے سامنے کساد بازاری کے خدشے کے باعث کم ہوتی طلب، بڑھتے ہوئے مقابلے، اور کووڈ سے منسلک پیداواری مشکلات ہیں۔ 

ایلون مسک نے دسمبر 2022 کے آخری کاروباری دن سٹاک مارکیٹس بند ہونے کے بعد ٹویٹ کی کہ ٹیسلا کے طویل مدتی اشاریے مضبوط ہیں جبکہ ’مارکیٹ کے قلیل مدتی پاگل پن‘ کی پیش گوئی نہیں کی جا سکتی۔ 

اب فوربز کے مطابق ایلون مسک کی دولت 178 ارب ڈالر ہے جبکہ برنارڈ آرنلٹ کی دولت کا اندازہ 188 ارب ڈالر تک لگایا جا رہا ہے۔ 


Facebook Comments - Accept Cookies to Enable FB Comments (See Footer).

بی بی سی

بی بی سی اور 'ہم سب' کے درمیان باہمی اشتراک کے معاہدے کے تحت بی بی سی کے مضامین 'ہم سب' پر شائع کیے جاتے ہیں۔

british-broadcasting-corp has 27681 posts and counting.See all posts by british-broadcasting-corp

Subscribe
Notify of
guest
0 Comments (Email address is not required)
Inline Feedbacks
View all comments