خواتین کا عالمی دن اور آج کی عورت

میڈیا کے اس طوفانی دور میں ایک پروگرام نظر سے گزرا جسمیں ماڈرن اینکر کچھ لڑکیوں کے اوپر ہونے والے مظالم کو دکھا رہی تھیں جن کو سن کے روح اور جسم کانپ جائے کہ ہمارے معاشرے میں اس طرح بھی ہوتا ہے، لڑکیوں کی بیچارگی ان کے چہروں سے عیاں تھی جس کو دیکھ کر دل اور دکھتا تھا۔ میں یہ سوچنے پہ مجبور ہو گئی کہ ہمارے معاشرے میں ایسی تنظیمیں تو ہیں جو ان ایشوز کو اٹھاتی ہیں مگر ہم نے کبھی کوئی ایسا پروگرام نہیں دیکھا جس میں بتایا گیا ہو کہ یہ وہی فلاں لڑکی ہے جس پہ ظلم ہوا تھا اور آج ہم نے اس کو گروم کر کے اس قابل بنا دیا کہ یہ اب معاشرے میں سر اٹھا کہ جیتی ہے۔

میں نے سوچا اس میں ہم خواتین میں بھی تو کہیں کچھ کمی نہیں؟ کہیں ہم بھی اپنے مقصد ِ حیات کو جانے بغیر ہی تو نہیں جیتے چلے جا رہے؟ کہیں مذہب سے دوری ہمارے مردوں میں سے ہوتی ہوئی ہم تک تو نہیں آ پہنچی؟ ایسا ہے تو اس کا ازالہ ممکن ہے۔ ہم جب تک زندہ ہیں ہر نیا دن ہمیں ایک نیا موقع دے رہا ہے دوبارہ سے زندگی کو اس کے صحیح معنوں میں جینے کا۔ اور ہم سے یہ سوال ضرور کیا جانا ہے کے زندگی کس طرح گزاری؟ رب نے قرآن میں فرما دیا سورہ بقرہ میں کہ ہم تمھیں ضرور آزمائیں گے۔ تو یقیناً یہ سوال بھی اٹھے گا کہ جب آزمایا گیا تو ہمارا کیا رویہ رہا؟

خواتین کا عالمی دن آیا تو خیال آیا کہ بحثیت خاتون اس پہ اپنی رائے کا اظہار کیا جائے شاید کچھ اور لوگ بھی میری طرح سوچتے ہوں۔

Read more