غیرت کے نام پر بلیدان

اس سے پہلے قارئین مجھ پر کوئی فتوی لگائیں میں انہیں ایک کہانی سناتا ہوں۔ سال 2012 ءہے اور جگہ کا نام ہے گاؤں گدار پالس۔ گدار کوہستان کے ضلع پالس کوہلی کے علاقے پالس کا ایک دور افتادہ گاؤں ہے۔ قراقرم ہائی وئے سے دو دن پیدل مسافت پر واقع گدار گاؤں میں آج شادی ہے۔ پانچ لڑکیاں جنہوں نے اپنے آپ کو چادروں میں چھپایا ہے مقامی لوک گیت گا رہی ہیں اور ان کے قریب دو لڑکے رقص کر رہے ہیں۔ ایک لڑکا موبائل سے ویڈیو بنا رہا ہے۔

شادی کا موقع ہے اور ان بے چاروں کے پاس خوشی منانے کا ایک معمولی بہانہ ہے۔ وہ اپنے انجام سے بے خبر تھوڑی سی خوشی کا اظہار گا کر اور رقص کر کرتے ہیں۔ دن گزر جاتے ہیں۔ جس نے موبائل پہ ویڈیو بنائی ہے اس کے موبائل سے یہ ویڈیو چارج کرتے وقت چوری ہوجاتی ہے اور پھر پورے گاؤں میں پھیل جاتی ہے۔ پورے گاؤں کی ”غیرت“ داؤ پر لگ جاتی ہے۔ غیرت کے رکھوالے بزرگ غصے میں ہیں۔ ان کی غیرت کو ٹھیس پہنچی ہے۔ ان کی آن گھائل ہوجاتی ہے۔

Read more
––>