آہستہ، آگے معیشت کی مرمت جاری ہے

سب لوگ اپنی رفتار آہستہ کرلیں آگے ٹوٹی پھوٹی معیشت کی مرمت جاری ہے۔ ہمارے دساور سے درآمد کیے گئے ہنر مند آپ کے شاندار معاشی مستقبل کے لئے ہمہ وقت مصروف ہیں، ہارن بجا کر انہیں تنگ نہ کریں۔ آپ لوگوں نے چونکہ معاشیات کا گہرا اور بور علم حاصل نہیں کیا ہوا اس لیے یہ مرمت کیسے ہورہی ہے، اس پر زیادہ غور آپ کی صحت کے لئے نقصان دہ ہے، صرف یہ ذہن نشین کرلیں کہ یہ ملک معاشی طور پر ڈوب رہا تھا ساتھ آپ بھی ڈوب رہے تھے، اب ایسا نہیں ہے۔ اب ہمارا ملک اگلے سال اڑھائی فیصد یعنی زکوٰۃ کی شرح سے ترقی کرے گا۔ کیا کہا، پہلے ترقی کی رفتار زیادہ تھی؟ ایسی باتوں سے ہمارے ہنر مندوں کو ذہنی اذیت پہنچتی ہے، ان سے اجتناب کریں۔ چلیں آپ کو سمجھا دیتے ہیں کہ ہم معیشت کی مرمت کیسے کر رہے ہیں۔

Read more

بادشاہ کا طوطا اور بھینس کا شکوہ!

عالی جاہ، جب سے معلوم ہوا ہے آپ اپنے طوطے کے لئے طلسمی پنجرہ بنوا رہے ہیں کلیجہ منہ کو آیا ہوا ہے۔ صبح سے سوچ رہی تھی کہ آپ سے شکوہ کروں یا پھر رہنے دوں۔ طرح طرح کے وسوسے آتے رہے کہ آپ کہیں برا نہ مان جائیں۔ میرا بڑا بیٹا جو میرے…

Read more

پاکستان کے قرض اور کچھ ذکر حاجی صاحب کی وفات کا

حاجی صاحب آدھی رات میں گھبرا کر اٹھے اور بیگم کو جگاتے ہوئے بولے، ”تمہیں پتہ چلا ہر پاکستانی پر 22,000 روپے قرضہ بڑھ گیا ہے؟ “ اس سے پہلے بیچاری، قسمت کی ماری کچھ بولتی، حاجی صاحب نے اپنی سیکنڈ لاسٹ ہچکی لی اور بے ہوش ہو گئے۔ ہوش میں آتے ہی اسٹاک ایکسچنج کے…

Read more

چئیرمین نیب کی جعلی جپھی وغیرہ

ہم وہ لوگ ہیں جو جعلی چیزوں کو اصلی جان کر بہت شوق اور مزا لے لے کر کھاتے، پیتے، پہنتے اور ”محظوظ“ ہوتے ہیں۔ اسی لئے کبھی گدھے کے گوشت کو بکرا سمجھ کر، کبھی اینٹوں کے برادے کو خالص مرچیں جان کر اور اکثر پاؤڈر کے شربت کو اصلی دودھ مان کر اپنی صحت بناتے بناتے دل کے دورے سے مر جاتے ہیں۔ اپنے اسی مخصوص مزاج کی وجہ سے گزشتہ چند دنوں سے چئیرمین نیب کی جعلی ویڈیو و آڈیو کو اصلی جان کر ہمارے جوان مذاق اڑارہے ہیں جبکہ بزرگ کڑھ رہے ہیں۔

22 کروڑ میں سے راقم الحروف سمیت چند سو لوگ ہی ہوں گے جنہیں وڈیو دیکھتے ہی یقین ہوگیا کہ یہ اگرتلہ سازش کیس کی طرح وطن عزیز کی چولیں ہلانے کے لئے ایک منصوبہ ہے جس کا واحد مقصد ملک پاک میں لڑی جانے والی بدعنوانی کے خلاف جنگ کو روکنا ہے۔ ایسی تمام جعلی چیزوں کو بنانے اور پھیلانے میں بدعنوان اپوزیشن کا فائدہ ہے کیونکہ وہ کڑے احتساب سے بچنا چاہتی ہے۔ یاد رہے کہ ایک صفحہ پر ہونے والی حکومت معصوم عن الخطا ہوتی ہے جب تک وہ اس صفحے سے نہ سرکے یا سرکنے کی کوشش کرے اوراسی طرح ہر اپوزیشن انتہائی بدعنوان ہوتی ہے جب تک وہ قومی سلامتی کے صفحے پر آ نہ جائے یا پھر اوپر اوپر سے اپوزیشن لگے لیکن اندر سے حکومت کے بارے میں دل موم رکھے۔

Read more