ایک بیٹی کی التجا

ابا شرو ع سے میرے آئیڈیل تھے میرے کیا شاید ہر بیٹی کے لئے اس کا باپ آئیڈیل ہی ہوتا ہے۔ یاد کی سیڑھی کے پہلے سرے پر ابا نظر آتے ہیں پینٹ کوٹ پہنے ہاتھ میں دھواں اڑاتا سگریٹ۔ سچ پوچھیں تو ہیرو لگتے تھے۔ پھر تھوڑی سمجھ آنے لگی تو ابا کے ہاتھ کا سگریٹ سٹائل سے زیادہ نقصان بتانے لگا۔ ہم لگے ابا کو منانے کہ مضر صحت ہے لیکن ابا کہاں مانتے تھے۔ ہزار ہا کوشش کے بعد بھی ناکام ہی رہے۔ 6 بیٹیوں کے بعد جب اللہ نے ابا کو 2 بیٹے دیے ابا پھر سے جوان ہو گئے لیکن دل بوڑھا ہو رہا تھا اچانک سے انجائنا اٹیک آیا اور ابا ڈر گئے کہ 6 بیٹیاں ہیں میری اور بیٹے کیسے ذمہ داری اٹھا پائیں گے۔ ابا نے اچانک ہی سگریٹ نوشی ترک کر دی اور صحت مند ہو گئے۔ ہم اسی فخر میں رہے ابا نے ہماری بات سنی ہے۔

Read more