کیوں نہ سب عوام بھی پاکستان سے محبت کا حلف اٹھائیں

آئینِ پاکستان میں موجود نہایت ہی خوبصورت ”تھرڈ شیڈول“ موجود ہے جس میں اعلیٰ و سرکاری منصب پر فائز ہونے والے تمام افراد کے لئے ایمان افروز حلف نامے درج ہیں۔ قانون کی روح سے اس امر کو واضح کر دیا گیا کہ وزیرِ اعظم و صدر سے لے کر وزرا اور قاضی تک، ممبرانِ اسمبلی سے لے کر ایک فوجی تک۔ ہر فرد جو کہ سرکار کی ملازمت میں ہو، لازم ہے کے اپنے فرائض کو انجام دینے سے قبل اپنا اپنا حلف اٹھائے جس کا بنیادی نقطہ یہ عہد ہے کہ وہ ریاستِ پاکستان کا وفادار رہے گا۔ عام فہم میں یوں سمجھ لیں کے تھرڈ شیڈول، آرٹیکل 5 کی عکاسی کرتے ہوئے آرٹیکل 6 کا عین تضاد ہے۔ بلکہ ہر اُس عمل اور فعل کا جس کا متحمل نہ ہمارا معاشرہ ہوسکتا ہے نہ ہی معیشت۔

Read more

میں مانتا ہوں آپ بہت ایماندار ہیں لیکن کچھ تو کرنا ہی ہوگا

مان لیا آپ ایماندار ہیں، بہت مخلص ہیں۔ اچھی نیت کے مالک ہیں، کچھ کرنا چاہتے ہیں۔ وہ مسیحا ہیں جو قوم کی لوٹی ہوئی دولت واپس لائے گا۔ انشا اللہ۔ مجھے معاف کیجئے گا کیونکہ میں یہ بھی مانتا ہوں کہ آپ کو سیاست نہیں آتی۔ اور بہتر ہے کہ آپ کو نہ ہی آئے۔ مگر داخلی تو داخلی، آپ کو خارجی امور پر گرفت ہے اور نہ ہی سفارتی آداب کی کوئی آگاہی۔ کوئی بات نہیں، آپ سیکھ جائیں گے۔

کیا آئی ایم ایف اور کیا بیرونی قرضوں کا سلسلہ، جناب والا، آپ اپنی ہی کہی باتوں، وعدوں اور ارادوں سے یوٹرن لے لیتے ہیں۔ بخدا کوئی بات نہیں، آپ سیکھ رہے ہیں۔ تقاریر تو ایک طرف آپ حساس معاملات اور موضوع پر بات کرتے ہوئے درست الفاظ کے چناؤ سے بھی قاصر ہیں۔ کوئی بات نہیں، یہ بھی سیکھ ہی جائیں گے۔

Read more

خواب۔ شرمندہِ تعبیر، یا صرف شرمندہ؟

باوجود اس امر کے کہ کل رات بار بار وقتِ نشریات کو بدلہ گیا، میں ان لاکھوں میں شمار کیا جاؤں گا جنہوں نے خلوصِ دل و نیت کے ساتھ بے چینی سے وزیراعظم کا قوم سے خطاب کا انتظار کیا۔ اور کیوں نہیں، ہم سب کا ماضی، حال اور مستقبل اسی ملک سے وابستہ ہے۔ پھر یہ کہ سب جانتے ہیں ملک سنگین مسائل سے دوچار ہے اور سیاسی منظرنامہ بھی کچھ اس قدر تیزی سے بدلا۔ سوچا ضرور وہ آکر کوئی ’نئی بات‘ کریں گے۔ اہم بات ہوگی جس کی اتنی رات گئے بھی اشد ضرورت ہے۔

جب نشریات کا وقت دو سے تین بار بدلہ گیا تومجھے یقین ہو چلا کے ضروری نکات کو حتمی شکل دی جا رہی ہوگی، الفاظ کا چناؤ، مضمون کی ترتیب وغیرہ۔ وقت تو لگ ہی جاتا ہے۔ نیز یہ کے تجربے کی بنیاد پر سمجھا کے اِسے براہ راست ہی دکھایا جائے گا۔ (وقت کے مسلسل ردوبدل کے باعث یقین ہو چلا تھا کے ریکارڈنگ نہیں ہو سکتی) ۔

Read more