برطانوی فوجی خاتون کی غیر اخلاقی تصاویر کیسے لیک ہوئیں؟

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

برطانوی فوج کی خاتون آفیسر کی سینکڑوں غیراخلاقی تصاویر لیک ہو گئیں، فوج میں ہنگامہ

دنیا بھر کی افواج میں بھرتی ہونے کے لیے ایک ڈسپلن ہوتا ہے جس پر امیدواروں کا پورا اترنا لازمی ہوتا ہے لیکن برطانوی فوج میںایک ایسی خاتون بھرتی ہو گئی کہ جب اس کا ماضی سامنے آیا تو فوج میں ہنگامہ برپا ہو گیا۔ میل آن لائن کے مطابق 26سالہ بریونی مورے نامی یہ لڑکی فوج میں بھرتی ہونے سے پہلے فحش ماڈلنگ کرتی تھی اور درجنوں غیراخلاقی فوٹوشوٹ کروا چکی تھی۔ اگرچہ بریونی فوج میں بھرتی ہونے سے پہلے اپنا یہ پروفیشن چھوڑ چکی تھی لیکن گزشتہ دنوں اس کی سینکڑوں نیم برہنہ اور برہنہ تصاویر فحش ویب سائٹس پر لیک ہو گئیں جس سے برطانوی فوج میں ہلچل مچ گئی۔

رپورٹ کے مطابق ان ویب سائٹس پر بنائے گئے اکاﺅنٹس میں سے ایک کی بائیو میں لکھا ہے کہ بریونی نے 2013ءمیں برہنہ ماڈلنگ کا کیریئر شروع کیا تھا۔ ویب سائٹس پر پوسٹ کی جانے والی ایک نیم برہنہ تصویر میں اس نے اپنی فوجی یونیفارم کی ٹائی بھی پہن رکھی ہوتی ہے۔ ان تصاویر کے سامنے آنے پر بریونی کے ساتھی فوجی سراپا حیرت بنے ہوئے ہیں۔ ایک تصویر پر کمنٹ کرتے ہوئے بریونی کے ایک ساتھی فوجی نے لکھا کہ ”اب فوج نے ہر طرح کے لوگ بھرتی کرنے شروع کر دیئے ہیں۔“

ایک اورفوجی نے لکھا کہ ”بریونی کا ماضی جان کر ہم سب بھونچکا رہ گئے ہیں۔“ رپورٹ کے مطابق تصاویر سامنے آنے پر سینئرز نے بریونی کو طلب کیا اور اس سے تصاویر کے متعلق پوچھ گچھ کی۔ دوسری طرف بریونی کی رجمنٹ کے ایک سینئر افسر نے ’دی سن‘ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ”ہر شخص کا ایک ماضی ہوتا ہے، جو بریونی کا بھی ہے۔ ہمیں اس پر نہیں جانا چاہیے۔ وہ ایک اچھی فوجی ہے اور یہی بات اہمیت رکھتی ہے۔“

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •