غیر معمولی عورت

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

مایہ انجیلو
ترجمہ ثنا بتول درانی

حسین عورتیں حیران ہیں کہ میرے فخر کا راز کیا ہے۔
میں پیاری نہیں، نہ کسی ماڈل جیسی جسامت میرا خواب ہے
لیکن جب میں یہ کہتی ہوں
تو گمان کیا جاتا ہے میں جھوٹی ہوں
میں کہتی ہوں
میرے بازوں کے ہالے
میری پشت کا پھیلاو
میرے لبوں کے ابھار
سب یہی بتانے کے لیے ہیں
کہ میں عورت ہوں
میں ایک باوقار عورت ہوں
مجھے عورت ہونے پہ فخر ہے
میں عورت ہوں

میں جب کسی کمرے میں داخل ہوتی ہوں
پر وقار و سر بلند خوش کن احساس لیے
اور مرد کے لیے
خواہ وہ میرے احترام میں کھڑا ہو
یا گھٹنوں کے بل بیٹھ جائے۔
پھر وہ میرے گرد شہد کی مکھیوں کی طرح ہالہ بنا لیتے ہیں
میں کہتی ہوں
یہ میری آنکھوں کی چمک ہے
میرے دانتوں کی سفیدی
میری کمر کا بل
میرے پاوں میں تھرکتی خوشی
سب یہی بتانے کے لیے ہیں
کہ میں ایک عورت ہوں
باوقار عورت ہوں
مجھے عورت ہونے پہ فخر ہے
میں عورت ہوں

مرد خود سمجھ نہیں پاتے
وہ مجھ میں کیا دیکھتے ہیں
وہ بہت کوشش کرتے ہیں
لیکن میرے من کے بھید کو جان نہیں پاتے
میں جب بھید سے پردہ اٹھاتی ہوں
وہ پھر بھی دیکھ نہیں پاتے
میں کہتی ہوں
میری پشت کی کمان
میری مسکراہٹ کی چمک
میرے سینے کا ابھار
میرے انداز کا وقار
ثابت کرتے ہیں
کہ میں ایک عورت ہوں
باوقارعورت ہوں
مجھے عورت ہونے پہ فخر ہے
میں عورت ہوں

اب تم سمجھ سکتے ہونا
کیوں میرا سر نہیں جھکتا
میں اچھل کود کرتی ہوں
نہ ہی بلند آواز سے توجہ مرکوز کروانا چاہتی ہوں
جب تم مجھے گزرتا دیکھو
تو تمہیں مجھ پہ فخر ہونا چاہیے
میں کہتی ہوں
یہ نہ میری ہیل کی ٹک ٹک ہے
نہ بالوں کو جوڑا
نہ ہاتھ کی ہتھلی
جسے میری توجہ کی ضرورت ہے
کیونکہ میں ایک عورت ہوں
مجھے عورت ہونے پہ فخر ہے
میں عورت ہوں۔
خواتین کے عالمی دن پہ ایک پیغام جنس اہم نہیں انسانیت اہم ہے۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •